بھارتی ڈائریکٹر کا فلموں میں کام کیلئے رات ساتھ گزارنے کا مطالبہ


aman
بھارتی ماڈل و اداکارہ امن سندھو نے فلموں میں کام دینے کے بدلے غیر اخلاقی کام کرنے پر مجبور کرنے والے جعلی ہدایتکار دیپک مشرا کو سرعام تھپڑ رسید کردیئے اور ویڈیو بنا کرسوشل میڈیا پر جاری کردی۔
بالی ووڈ میں اداکاراؤں اور ماڈلز کو فلموں میں کام کا جھانسہ دے کر جسم فروشی پر مجبور کرناعام سی بات ہوتی جارہی ہے اور نامور اداکاراؤں کو بھی متعدد بار ہدایتکاروں اور فلمسازوں کی جانب سے دھمکایا گیا ہے جس کا برملا اعتراف اداکارہ کنگنا رناوت نے بھی کیا ہے لیکن اب ایک اور ماڈل گرل کو غیر اخلاقی کام کرنے کے لیے مجبور کرنے کا واقعہ سامنے آیا ہے۔
بھارتی میڈیا رپورٹس کے مطابق ماڈل گرل امن سندھو کو دپپک مشرا نامی شخص نے ہدایتکار بن کر فلموں میں کام کرنے کی پیش کش کی اور ساتھ میں رات گزارنے کا کہا جس پر ماڈل گرل نے اسے ملاقات کے لیے مقامی ہوٹل میں بلایا جہاں انہوں نے جعلی ہدایتکار کی عوام کے سامنے دھلائی کی۔
امن سندھو نے جعلی ہدایتکار کے خلاف پولیس میں مقدمہ بھی درج کرایا ہے لیکن پولیس کسی قسم کی کارروائی سے گریز کررہی ہے جب کہ ماڈل گرل نے پورے معاملے کی ویڈیو بھی بنائی جسے سوشل میڈیا پر جاری کردیا جس کے بعد ایک نئی بحث کا آغاز ہوگیا ہے اور اداکارہ کے اس اقدام کو کافی سراہا جارہا ہے۔

Related posts