بے نظیر بھٹو کو عالم برزخ سے یونیورسٹی داخلہ ٹیسٹ کیلئے بلا لیا گیا

WASHINGTON - JANUARY 26: Former Prime Minister of Pakistan Benazir Bhutto listens to questions during a news conference at the Voice of America January 26, 2006 in Washington, DC. Bhutto spoke about the war or terrorism and the future of democracy in Pakistan. (Photo by Mark Wilson/Getty Images)

فیصل آباد(ندیم جاوید)زندگی میں مصائب ومظالم کا شکار رہنے والی عظیم سیاسی رہنما اور سابق خاتون وزیر اعظم محترمہ بے نظیر بھٹوکو شہادت کے بعد بھی دنیا والوں نے چین نہیں لینے دیا۔ سابق خاتون وزیر اعظم کو عالم برزخ سے ایم فل کے داخلہ کیلئے انٹری ٹیسٹ کیلئے بلا لیاگیا۔ ایسا محترمہ کی شہادت کے 9سال بعد ہوا ہے اور ہوا بھی فیصل آباد میں ہے۔ محترمہ کو بلایا گیا ہے ایم فل ماس کمیونیکیشن میں داخلے کیلئے جبکہ محترمہ کا ماس کمیونیکیشن میں داخلے اور وہ بھی اپنی شہادت کے ایک دہائی بعد ممکن نظر نہیں آتا۔ ایسا مضحکہ خیز اور افسوسناک اقدام اٹھایا ہے جی سی یونیورسٹی فیصل آباد کی انتظامیہ نے۔نیوز لائن کے مطابق خواب غفلت کی نیند سوئی جی سی یونیورسٹی فیصل آباد کی انتظامیہ کو ابتدائی مرحلے میں ہی محترمہ بے نظیر بھٹو کا داخلہ فارم جمع ہونے کا علم ہو گیا تھا۔ اس کے باوجود محترمہ کی تصویر کیساتھ بھجوائے جانے والے داخلہ فارم پر محترمہ کو انٹری ٹیسٹ کیلئے بلا لیاگیا۔دستاویزات کے مطابق ایم فل ماس کمیونیکیشن ایوننگ کی خاتون امیدوار نے اپنے داخلہ فارم میں محترمہ بے نظیر بھٹو کی مشہور تصویر لگائی ہوئی ہے۔ جس میں محترمہ واضح طور پر پہچانی جاتی ہیں۔اس کے باوجود گورنمنٹ کالج یونیورسٹی فیصل آباد کی ”ذہین ترین“ایڈمنسٹریشن نے محترمہ کے داخلہ فارم پر ٹریکنگ آئی ڈی”941475“جاری کردیا۔ معاملہ یہاں تک ہی نہیں رہا۔ محترمہ بے نظیر بھٹو کو عالم برزخ سے براہ راست جی سی یونیورسٹی میں انٹری ٹیسٹ کیلئے بلا لیا گیا۔ یونیورسٹی کی ہونہار انتظامیہ نے محترمہ کو انٹری ٹیسٹ کیلئے رول نمبر بھی جاری کر دیا۔ ان کا رول نمبر 61تھا۔8ستمبر 2016کو ہونیوالے انٹری ٹیسٹ میں محترمہ کی تصویر والے ٹریکنگ آئی ڈی کو ڈیپارٹمنٹ کے کمرہ نمبر تین پر لگائے گئے نوٹس میں شامل رکھا گیا۔ اتنے مراحل گزرنے کے باوجود یونیورسٹی انتظامیہ کو اپنی سنگین غلطی کا اندازہ نہ ہوا اور انٹری ٹیسٹ کی حاضری میں بھی محترمہ بے نظیر بھٹو کی تصویر والی ٹریکنگ آئی ڈی شامل رکھی گئی۔افسوسناک کہانی کا یہیں پر اختتام نہیں ہوا بلکہ جی سی یونیورسٹی کے حکام نے انٹری ٹیسٹ کے رزلٹ میں محترمہ بے نظیر بھٹو کی مذکورہ آئی ڈی کو غیر حاضر ظاہر کیا اور انٹری ٹیسٹ میں انہیں فیل قرار دیدیا۔ نیوز لائن کے مطابق ٹریکنگ آئی ڈی کے اجراء‘انٹری ٹیسٹ کی لسٹوں کی تیاری‘ انٹری ٹیسٹ کا رول نمبر جاری کئے جانے سے لے کر انٹری ٹیسٹ میں غیر حاضری کی بنیاد پر محترمہ کو فیل قرار دئیے جانے تک تمام مراحل کی منظوری یونیورسٹی کی ایڈمشن کمیٹی کے انچارج ڈاکٹر زبیر کی منظوری سے طے پائے۔ذرائع کے مطابق جی سی یونیورسٹی کے وائس چانسلر ڈاکٹر محمد علی‘ ایڈمشن کمیٹی کے انچارج ڈاکٹر زبیر سمیت تمام حکام اس معاملے سے آگاہ ہیں مگر اس کے باوجود انہوں نے ایسا کرنیوالے کے خلاف کوئی ایکشن لینا مناسب نہیں سمجھا۔نیوز لائن کے رابطہ کرنے پر یونیورسٹی کے متعلقہ حکا م نے محترمہ کا داخلہ فارم آنے‘ انٹری ٹیسٹ میں شامل ہونے اور رزلٹ کی تیاری تک کے تمام مراحل میں ان کا ٹریکنگ آئی ڈی شامل رہنے کی تصدیق کی تاہم حکام کا کہنا تھا کہ اس بارے یونیورسٹی کا باضابطہ مؤقف جامعہ کے ترجمان ڈاکٹر عبدالقادر مشتاق ہی دے سکتے ہیں۔ نیوز لائن کے رابطہ کرنے اور مسلسل فون کرنے پر بھی ڈاکٹر عبدالقادر مشتاق نے اس بارے یونیورسٹی کا باضابطہ مؤقف نہ دیا۔

Related posts