جماعت الدعوۃ کالعدم تنظیموں کی فہرست میں شامل


وزارت داخلہ نے نیشنل ایکشن پلان پر عمل درآمد کرتے ہوئے جماعت الدعوۃ اور حقانی نیٹ ورک کو کالعدم تنظیموں کی فہرست میں شامل کرلیا ہے تاہم حکومت اس کے اعلان میں کچکچاہٹ کا شکار ہے۔

ذرائع کے مطابق امریکا کی جانب سے کئی بار حقانی نیٹ ورک اورجماعت الدعوۃ پر پابندی عائد کرنے کا مطالبہ کیا گیا تاہم حکومت اس معاملے میں تذبذب کا شکار تھی۔ذرائع کا کہنا تھا کہ پشاورکے آرمی پبلک اسکول میں دہشت گردوں کی جانب سے حملے کے بعد حکومت نے اچھے اور برے طالبان کا امتیاز کئے بغیر سب تنظیموں کے خلاف کارروائی کرنے کا فیصلہ کیا۔
ذرائع کو حاصل ایک دستاویز کے مطابق وفاقی وزارت داخلہ نے کالعدم تنظیموں کی فہرست میں مزید تنظیموں کے نام شامل کرلیے ہیں جن میں حرکتۃ الجہاد اسلامی، حرکتۃ المجاہدین، فلاح انسانیت فاونڈیشن، اُمہ تعمیر نو، حاجی خیراللہ حاجی ستار منی ایکسچینج، راحت لمیٹڈ، روشن منی ایکسچینج، الاختر ٹرسٹ، الرشید ٹرسٹ، حقانی نیٹ ورک اور جماعۃ الدعوۃ شامل ہیں۔
افغانستان سے تعلق رکھنے والے جلال الدین حقانی کے بنائے گئےعسکری گروپ حقانی نیٹ ورک کوافغانستان میں امریکی فوجوں پر متعدد حملوں میں ملوث ہونے کی وجہ سے اقوام متحدہ نے 2012 میں پابندی لگا دی گئی تھی۔
ادھرامریکا اور ہندوستان کی جانب سے ہمیشہ سے حافظ سعید کی تنظیم جماعۃ الدعوۃ (جو کہ کالعدم لشکرطیبہ کی ایک ذیلی شاخ تصور کی جاتی ہے) کو 2008 میں ممبئی میں ہونے والے حملوں کا ذمہ دار ٹہرایا جاتا رہا ہے۔

Related posts