جھنگ میں کالعدم جماعت کو رانا ثناء اللہ نے جتوایا

اسلام آباد (نیوز لائن)اپنے ہی گراتے ہیں نشیمن پر بجلیاں‘ یہ سامنے آیا جھنگ کے ضمنی الیکشن میں جہاں ن لیگ کے اہم رہنما نے اپنی جماعت کے امیدوار کو شکست دلوانے اور کالعدم جماعت کے امیدوار کو جتوانے میں اہم کردار ادا کیا۔جھنگ کے ضمنی الیکشن میں مسلم لیگ ن کی شکست کی سب سے بڑی وجہ انتخابات کے دوران ن لیگ کے اہم رہنما اور صوبائی وزیر قانون رانا ثناء اللہ کا اپنی جماعت کے امیدوار آزاد ناصر انصاری کی مخالفت کرنا اور کالعدم جماعت سے تعلق رکھنے والے امیدوار مولانا مسرور نواز جھنگوی کی حمائت کرنا بتایا جا رہا ہے۔نیوز لائن کے مطابق رانا ثناء اللہ کے کالعدم سپاہ صحابہ اور کالعدم لشکر جھنگوی کیساتھ دیرینہ روابط اور تعلقات ہیں۔ لشکر جھنگوی کے اہم رہنماؤں کے ساتھ ان کی قرابت داری ہے اور کئی الیکشن میں وہ لوگ رانا ثناء اللہ کے شانہ بشانہ رہے ہیں۔ جھنگ کے ضمنی الیکشن میں کالعدم جماعت کے امیدوار کو جتوانے کے پس منظر بھی یہی احسانات تھے۔ رانا ثناء اللہ نے کالعدم جماعت کے رہنما کو جتوا کر اس جماعت کے پرانے احسانات اتارنے اور ان کے ساتھ اپنے تعلقات کو مزید مظبوط کرنے کی کوشش کی ہے۔ذرائع کے مطابق جھنگ کے لوگ اور خاص طور پر ن لیگ کی مقامی قیادت اس حوالے سے رانا ثناء اللہ سے نالاں ہے اور رانا ثناء اللہ کی طرف سے کالعدم جماعت کی حمائت کرنے کے معاملے کو وزیراعظم میاں نواز شریف تک لے جانے کی تیاریاں کر رہے ہیں۔شہر بھر میں اس حوالے سے چہ مگوئیاں ہو رہی ہیں اور کالعدم جماعت کی جیت پرشہر بھر میں سراسیمگی پائی جاتی ہے اور دیگر مکاتب فکرکے لوگ خوف کی کیفیت کا شکار ہیں۔

Related posts