خان صاحب! میں بھی کسی کام کی نہیں

میں کتنی احمق اور بے وقوف تھی۔ میں نے اپنے باپ سے جھگڑا کیا‘ بھائیوں کی مخالفت کی‘ سہیلیوں کو ناراض کیاکیونکہ میں پی ٹی آئی کی حامی تھی۔ میں اُس تبدیلی کی حامی تھی جو میرے ملک میں بہار کا جھونکا ثابت ہو۔ میں نواز شریف کے خلاف تھی‘ میں سٹیٹس کو کے خلاف تھی‘ میں کرپشن کے خلاف تھی۔ لیکن میں ایک عام ورکر تھی۔میرے گھر کا ماحول مجھے اجازت نہیں دیتا تھا کہ میں کسی سیاسی جلسے میں جاؤں لیکن اس کے باوجود میری ہر دعا عمران خان کے لیے نکلتی تھی‘ میری ہر نماز میں پی ٹی آئی کی کامیابی کی التجا ہوتی تھی۔لیکن میں بہت شرمندہ ہوں۔مجھے ناز بلوچ سے ہونے والے سلوک پر سخت احتجاج ہے۔ خان صاحب ! آپ کے چند الفاظوں نے میرے اندر طوفان برپا کردیا ہے۔’’ناز بلوچ کسی کام کی نہیں تھی‘‘ اگر ناز بلوچ کسی کام کی نہیں تھی تو ہم جیسی لڑکیاں جو گھر بیٹھی پی ٹی آئی کی محبت میں اندھی ہوئی جارہی ہیں ہماری کیا حیثیت ہے؟ ناز بلوچ تو چلو پھر بھی کسی نہ کسی حوالے سے ایکٹو تھی‘ ہم تو سہانے سپنے دیکھنے اور دعاؤں کے علاوہ کچھ بھی نہیں کر سکتیں‘ ہم تو بالکل ہی نکمی ہوئیں ناں۔خان صاحب آپ کتنے ظالم ہیں‘ آپ کو احساس ہی نہیں کہ عورت کا ذکرکیسے کیا جاتاہے؟ مجھے تو شیریں مزاری سے بھی شکایت ہے‘ انہیں جب خواجہ آصف نے ٹریکٹر ٹرالی کہا تھا تو انہوں نے طوفان برپا کردیا تھا‘ اب ناز بلوچ کے بارے میں خان صاحب اور شفقت محمود کے ریمارکس پر وہ خاموش کیوں ہیں؟ کیا عزت صرف شیریں مزاری کی ہے۔ بائی دی وے ناز بلوچ کا قصور کیا تھا؟ صرف یہ کہ اس نے آپ کی پارٹی چھوڑ دی؟ یعنی جو آپ کی پارٹی چھوڑدے وہ ذلیل ترین قرار پاتاہے اور جو ذلیل ترین آپ کی پارٹی جوائن کرلے وہ فلاح پاجاتاہے۔عمران خان صاحب یہ آپ کو کیا ہوگیا ہے؟ کیا یہ نیا پاکستان ہے؟ کیا نئے پاکستان میں یہ سب ہوگا؟ کیا نئے پاکستان میں آپ کے مخالفین کو گالیوں کا سامنا کرنا پڑے گا‘ آپ عمران ہیں یا طالبان؟ مجھے بتائیے کہ میں کس طرف جاؤں؟ نواز شریف کو میں ووٹ نہیں دینا چاہتی اور آپ نے مجھے اپنے ووٹ سے بہت دور کرلیا ہے۔اب میرے لیے کون ساراستہ ہے؟ ہاں ایک راستہ ہے کہ میں ووٹ ہی نہ ڈالوں۔ لیکن اس سے بھی زیادہ دُکھ اس بات کا ہوگا کہ میں نے آپ کو جیسا سمجھا تھا آپ ویسے نہیں نکلے۔میری اور میرے جیسی خواتین کی کیفیت کو سمجھئے جو آپ کو لیڈر مانتی رہی ہیں۔فواد چوہدری جو پی ٹی آئی کے ٹائیگرز کو ’کتا‘ تھا اس کی پرانی ٹوئیٹس آپ نے پڑھی ہیں؟ بابر اعوان کے آپ پر غلیظ الزامات سنے ہیں؟ فردوس عاشق اعوان کی پرانی بیان بازی یاد ہے؟ اگر یاد ہے تو پھر یہ لوگ کیسے آپ کے قریب ہوگئے۔آپ چاہتے تو ناز بلوچ کے بارے میں یہ بھی کہہ سکتے تھے کہ وہ ہماری بہن ہے‘ اگر اس نے پیپلز پارٹی جوائن کرلی ہے تو کوئی بات نہیں‘ ہم اس کے لیے نیک خواہشات رکھتے ہیں۔ یقین کیجئے آپ کے یہ دو جملے ناز بلوچ کو واپس پارٹی میں کھینچ لاتے۔ لیکن نہیں! آپ نے وہی کیا جو آپ کرتے ہیں۔ آپ نے اپنا سارا امیج برباد کرکے رکھ دیا ہے۔کیوں؟ آخرکیوں آپ کی پارٹی سے جانے والا گالیوں کا مستحق قرار پاتا ہے؟ اگر ایسا ہی ہے تو میں بھی آج سے آپ کی پارٹی چھوڑ رہی ہوں‘ گالیوں میں یاد رکھئے گا۔شکریہ!

شائستہ انور

Related posts

Leave a Comment