سوئی ناردرن گیس فیصل آباد ریجن نے کرپشن کے تمام ریکارڈ توڑ دئیے

فیصل آباد(ندیم جاوید)سوئی ناردرن گیس کا فیصل آباد ریجن کرپشن‘ گیس چوری اور لوٹ کھسوٹ کا گڑھ بن گیا۔گھریلو صارفین کے سر پر ہر وقت میٹر کاٹنے کی تلوار لئے سوار ایس این جی پی ایل کے حکام صنعت کاروں کو کروڑوں روپے کی ماہانہ گیس چوری کروا دیتے ہیں جبکہ میٹر سلو کرکے‘ میٹر بند کرکے اور دیگر ذرائع سے غیرقانونی گیس فراہم کرکے صنعت کاروں سے بھاری نذرانے الگ سے وصول کئے جاتے ہیں۔نیوز لائن کے مطابق ایس این جی پی ایل فیصل آباد ریجن میں کرپشن‘ گیس چوری اور نذرانہ وصولی میں پاکستان بھر کی تمام گیس سپلائی ریجن میں پہلے نمبر پر ہے۔صنعتی شہر ہونے کی وجہ سے یہاں گیس کی کھپت بھی زیادہ ہے اسی لحاظ سے یہاں کرپشن اور گیس چوری بھی پورے ملک میں سب سے زیادہ ہے۔ذرائع کے مطابق ٹیکسٹائل سٹی کہلانے والے ملک کے تیسر ے بڑے شہر فیصل آباد کے 347کارخانے‘ فیکٹریاں اور ملیں گیس چوری میں ملوث ہیں۔ کمرشل یونٹوں کو گیس کی فراہمی ہی غیرقانونی اور قواعد سے ہٹ کر ہوتی ہے۔ جبکہ شہر کے 183ریسٹورنٹ‘ پکوان اور شادی ہال گیس چوری کے جرم میں ملوث ہیں۔ ذرائع کے مطابق شہر میں بڑی تعداد میں رہائشی علاقوں کو غیرقانونی طریقے سے گیس فراہم کی گئی ہے اور ان سے بھاری نذرانے وصول کئے جاتے ہیں۔ذڑائع کے مطابق گیس چوری اور دیگر تمام قانون کی خلاف ورزیاں سوئی گیس حکام کی معاونت اور آشیر باد سے سرانجام پا رہے ہیں۔ نیوز لائن کے مطابق فیصل آباد ریجن میں تعیناتی کیلئے محکمہ سوئی گیس کے افسران و اہلکاران میں دوڑ لگی رہتی ہے اس کیلئے تگڑی سفارشیں لڑائی جاتی ہیں اور بھاری نذرانے دئیے جاتے ہیں۔

Related posts