شرمناک رپورٹ نشر کرنے پر 7 نیوز کی نشریات ایک ہفتہ کیلئے معطل


اسلام آباد( نیوزلائن)غیر مصدقہ ‘ من گھڑت‘ غیر پیشہ وارانہ ‘ اور انتہائی شرمناک رپورٹ نشر کرکے جی سی یونیورسٹی فیصل آباد کی طالبات کی عزت سے کھلواڑ کرنے اور یونیورسٹی کی بدنامی کا موجب بننے پرپاکستان الیکٹرانک میڈیا ریگولیٹری اتھارٹی (پیمرا)نے سیون نیوز کی نشریات ایک ہفتے کیلئے معطل کرنے ‘ اورسیون نیوز کے خاتون سمیت تینوں ڈائریکٹرز اور نیشنل ہسپتال فیصل آباد کی انتظامیہ کے خلاف فوجداری مقدمہ درج کرنے اور سات روز تک بار بار معذرت نشر کرنے کا حکم جاری کردیا۔نیوزلائن کے مطابق پیمرا اتھارٹی کے اسلام آباد ہیڈکوارٹر میں ہونیوالے اجلاس میں سیون نیوز کی نشریات ایک ہفتے کیلئے معطل کرنے کے احکامات جاری کئے گئے ہیں۔ فیصلے میں واضح کیا گیا ہے کہ سیون نیوز کی نشریات یکم نومبر صبح آٹھ بجے سے سات نومبر صبح سات بج کر 59منٹ تک معطل رہیں گی۔ فیصلے میں واضح کیا گیا ہے کہ سیون نیوز نے جی سی یونیورسٹی کی طالبات کے حوالے سے من گھڑت ‘ غیر پیشہ وارانہ اور انتہائی شرمناک رپورٹ نشر کی جس کی کوئی بنیاد نہیں تھی۔اور رپورٹ غیر مصدقہ ثابت ہوئی ۔اس رپورٹ کے ذریعے سیون نیوز نے یونیورسٹی کی طالبات کی عزت اچھالی‘ اور یونیورسٹی کی بدنامی کی۔اس کے علاوہ طالبات کے والدین اور رشتہ داروں کو بھی شدید کوفت کا سامنا کرنا پڑا۔پیمرا کے فیصلے میں یہ بھی واضح کیا گیا ہے کہ سیون نیوز کے خلاف جی سی یونیورسٹی کی شکائت کی سماعت کونسل آف کمپلینٹس لاہور نے کی اور سیون نیوز کی شرمناک رپورٹ کی سنگینی کے پیش نظر ایک ماہ تک اس کی نشریات معطل رکھنے کی سفارش کی مگر ادارے سے وابستہ ورکنگ جرنلسٹوں اور دیگر ورکرز کے معاشی معاملات کے پیش نظر سیون نیوز کی سزا میں نرمی کرتے ہوئے ااس کی نشریات ایک ہفتے کیلئے معطل کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ پیمرا نے ایک ہفتے تک نشریات معطل رکھنے کے دوران نشر کئے جانے والے معزرت نامہ کا نمونہ بھی دیا ہے۔اور اس کو من و عن نشر کرنے کا حکم دیاہے۔ساتھ ہی پنجاب حکومت کو ہدائت کی ہے کہ سیون نیوز کی خاتون ڈائریکٹر رومانہ آصف اور دو دوسرے ڈائریکٹرز شیراز ہاشمی اور فراز ہاشمی اور نیشنل ہسپتال فیصل آباد کی انتظامیہ کے ذمہ داران اور دیگر متعلقین کے خلاف فوجداری مقدمہ درج کیا جائے۔

Related posts

Leave a Comment