صوابی انٹر چینج میدان جنگ بن گیا، پولیس کی شیلنگ، مظاہرین کی جانب سے پتھراؤ

sawabi-blockپشاور موٹروے پر صوابی انٹر چینج میدان جنگ بن گیا۔ پی ٹی آئی کارکن اور پولیس آمنے سامنے آ گئے۔ پولیس کی زبردست شیلنگ نے کارکنوں کی دوڑیں لگوا دیں۔ مظاہرین نے مورچہ بند ہو کر پولیس پر پتھراؤ کیا اور جھاڑیوں میں آگ بھی لگا دی۔ کرینوں اور گاڑیوں کی لمبی قطار کے ساتھ وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا پرویز خٹک کی قیادت میں پی ٹی آئی کارکنوں کا قافلہ صوابی انٹر چینج پر پہنچا تو سامنے پولیس موجود تھی۔ پولیس نے مظاہرین کو منتشر کرنے کیلئے شیلنگ شروع کر دی۔ شیلنگ ہوتے ہی کارکنوں میں بھگدڑ مچ گئی۔ شیلنگ سے درجنوں کارکنوں کی حالت خراب ہو گئی۔ دیکھتے ہی دیکھتے علاقہ میدان جنگ بن گیا۔ پی ٹی آئی کے مشتعل مظاہرین نے جھاڑیوں میں آگ لگا دی اور مورچہ بند ہو کر پولیس پر پتھراؤ شروع کر دیا۔ کارکنوں نے پتھراؤ کیلئے غلیل کا استعمال بھی کیا۔ دوسری جانب پولیس کی شیلنگ اور ہنگامہ آرائی سے وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا گاڑی میں محصور ہو کر رہ گئے۔ اس دوران مظاہرے کی ہیلی کاپٹر کے ذریعے فضائی نگرانی بھی جاری رہی۔

Related posts