عاشورہ محرم ‘ بچھڑنے والوں کی یاد اپنوں کو قبرستان کھینچ لائی

qabarastanقبروں کی مرمت، گل پاشی اور فاتحہ خوانی کرنے والوں کا قبرستانوں میں تانتا بندھ گیا شہریوں کی ایک بڑی تعداد قبرستانوں میں اپنے پیاروں کی قبروں پر مٹی ڈالنے میں مصروف ہے‘ گل پاشی کے بعد فاتحہ خوانی بھی کی جا رہی ہےیوم عاشور کے موقع پر بچھڑنے والوں کی یاد اپنوں کو قبرستان کھینچ لائی۔ قبروں کی مرمت، گل پاشی اور فاتحہ خوانی کرنے والوں کا تانتا بندھ گیا۔ قبرستانوں میں آنے والے شہری نیاز، اناج اور پھول بھی ساتھ لاتے ہیں، جن کی سہولت کے لئے قبرستانوں کے باہر چھابڑی فروشوں نے سٹالز سجا لئے ہیں، جہاں سے یہ اشیاء بآسانی مل جاتی ہیں۔ محرم الحرام کے دوران جہاں شہیدان کربلا کی قربانیوں کو خراج عقیدت پیش کرنے کا سلسلہ جاری رہتا ہے ، وہیں بچھڑنے والے اپنوں کی یاد شہریوں کو قبرستانوں میں کھینچ لاتی ہے ۔ گزشتہ روز بھی بڑی تعداد میں لوگ شہر خموشاں پہنچ گئے ، جہاں فاتحہ خوانی اور گل پاشی کا سلسلہ بھی جاری رہا۔ قبروں کی ٹوٹ پھوٹ درست کرنے کے ساتھ ساتھ ان پر پھول نچھاور کرتے کمسن بچے بھی بڑوں کے ساتھ اس روایتی حاضری میں شامل اور اپنے بزرگوں، عزیزوں، دوستوں اور رشتہ داروں کی آخری آرام گاہوں کے قریب بیٹھے درود و تسبیح میں مصروف رہے ۔ اس موقع پر گورکن بھی قبرستانوں کا رخ کرنے والے شہریوں کی مدد میں مصروف دکھائی دئیے ۔ شہریوں کا کہنا تھا کہ جب بھی وقت ملے ، قبرستان آتے رہنا چاہئے لیکن محرم الحرام کے دوران قبرستان میں آ کر دعا کرنا اس لئے بھی افضل ہے کیونکہ یہ نواسہ رسول امام حسینؓ کی کربلا میں عظیم قربانی کا مہینہ ہے ۔

Related posts

Leave a Comment

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.