علم فروش مافیا طلباء و طالبات کا مستقبل تباہ کرنے کیلئے سرگرداں

لاہور(نیوزلائن)پنجاب بھر میں علم فروش مافیا نے پنجے گاڑ رکھے ہیں۔ علم فروش مافیا نے بیوروکریسی اور ایوان اقتدار کے مکینوں کیساتھ گٹھ جوڑ کرکے صوبہ بھر میں تعلیمی نظام کو تہہ و بالا کر رکھا ہے اور کوئی اس کے خلاف ایکشن لینے والا نہیں ہے۔پرائیویٹ تعلیمی اداروں کا غیرقانونی بزنس چمکانے کیلئے سرکاری سکولوں اور کالجوں کو تباہ کیا جا رہا ہے نیوزلائن کے مطابق ایک منظم سازش کے تحت نجی کالجوں اور سکولوں کو کھلی چھٹی دی جا رہی ہے اور سرکاری اداروں کو تباہ کیا جا رہا ہے۔علم فروش مافیا میڈیا اور ایوان اقتدار کی مدد سے ملک کے مستبل سے کھیل رہے ہیں ۔ نااہل اور غیرتربیت یافتہ ٹیچرز کے ذریعے بچوں کو صرف رٹالگایا جا رہا ہے۔ بورڈز میں اعلیٰ پوزیشنیں حاصل کرنے والے نجی اداروں کے بچے میڈیکل اوریونیورسٹی داخلہ ٹیسٹ میں فیل ہو رہے ہیں ۔ ایسے میں بچوں کے انتہائی اعلیٰ پوزیشن حاصل کرنا مشکوک اور تعلیم دینے والے اساتذہ کی اہلیت اور اداروں کی کارکردگی سوالیہ نشان بن جاتی ہے۔ذرائع کے مطابق علم فروش مافیا کے ادارے رجسٹریشن کی اہلیت پر پورا ہی نہیں اترتے ۔ ان کے اساتذہ کی اہلیت نہ ہونے کے برابر‘ اساتذہ کی تنخواہیں مزدور سے بھی کم۔ کلاس رومز دڑبہ نما۔ کھیلوں کی سہولیات ندارد۔ پڑھائی کا معیار انتہائی کم تر ۔ چیک اینڈ بیلنس کا کوئی نظام نہیں ۔ فیسوں کے تعین کا کوئی طریقہ کار نہیں۔حکمرانوں کیساتھ ان کا گٹھ جوڑ۔ بیوروکریسی ان کے پیسے کی غلام۔اس سب کا نقصان صرف طلبہ کو ہو رہا ہے اور ملک کا مستقبل تباہ ہو رہا ہے۔وزارت تعلیم کے حکام خاموش تماشائی بنے بیٹھے ہیں اور نظام کی مکمل تباہی کا انتظار کر رہے ہیں۔

Related posts

Leave a Comment