فیصل آباد میں شہباز شریف کا پاور شو بھی بری طرح ناکام


فیصل آباد(نیوزلائن )مسلم لیگ ن کے قائد میاں شہباز شریف کا میاں نواز شریف کی گرفتاری کے بعد ن لیگ کے گڑھ فیصل آباد میں پہلا پاور شو ہی بری طرح ناکام رہا۔ سابق وزیر قانون سمیت ن لیگ کے 31امیدوار مل کر بھی 3100لوگ جلسہ گاہ میں اکٹھے نہ کرسکے۔ میاں نواز شریف کی جلاوطنی کے دوران لڑے گئے الیکشن 2002میں سابق میئر چوہدری شیر علی نے اس سے دس گنا زائد لوگ اکٹھے کرکے فیصل آباد میں ن لیگ کی مضبوطی کا ثبوت دیدیا تھا۔ نیوزلائن کے مطابق مسلم لیگ ن کے قائد میاں شہباز شریف نے پنجاب حکومت کے خاتمے کے بعد فیصل آباد کا پہلا دورہ کیا۔ میاں شہباز شریف نے الیکشن 2018کے سلسلے میں الفتح گراؤنڈ سلیمی چوک میں’’ جلسہ عام‘‘ کیا۔ پندرہ سو افراد کی گنجائش والی گراؤنڈ میں مسلم لیگ ن فیصل آباد کی قیادت نے ایک ہزار کرسی لگائی اور ایک ہزار کرسی پر سابق وزیر قانون کی زیرنگرانی جلسے میں ’’لاکھوں‘‘ افراد اکٹھے کرکے بٹھا دئیے گئے۔ جلسہ عام کیلئے مسلم لیگ ن نے دھوبی گھاٹ گراؤنڈ کا انتخاب کیا تھا مگر دھوبی گھاٹ گراؤنڈ میں پی ٹی آئی کے ناکام شو کا حال دیکھ کر اور سابق میئر چوہدری شیر علی کی طرف سے جلسہ عام میں عدم دلچسپی دیکھ کر ن لیگ کی مقامی قیادت دھوبی گھاٹ گراؤنڈ میں جلسہ کرنے سے ڈر گئی اور بہانہ بنا کر پہلے جلسہ منسوخ کیا اور پھر الفتح گراؤنڈ میں’’ جلسہ عام‘‘کر دیا ۔ فیصل آباد کے دس قومی اور 21صوبائی حلقوں کے 31امیدوار مل کر بھی اپنے مرکزی صدر کے فیصل آباد میں مرکزی انتخابی جلسے کیلئے 31سو افراد اکٹھے کرنے میں بھی کامیاب نہ ہوسکے۔ سابق وزیر قانون سمیت تمام امیدوار خود اکیلے اکیلے آکر جلسہ کی رونق بڑھاتے رہے۔ فیصل آباد میں پی ٹی آئی کے بعد مسلم لیگ ن کا پاور شو بھی بری طرح ناکام ہونے پر سیاسی حلقے گومگوں کی کیفیت کا شکار ہیں اور انتخابی نتائج کے اونٹ کی کروٹ کا انتظار کرنے پر مصر ہیں۔

Related posts