فیصل آباد میں یونیورسٹی آف سنٹرل پنجاب کا غیرقانونی کیمپس


فیصل آباد(نیوزلائن)فیصل آباد میں یونیورسٹی آف سنٹرل پنجاب لاہور کا غیرقانونی اور غیرمنظور شدہ کیمپس قائم کئے جانے کا انکشاف ہوا ہے۔ یو سی پی کا کیمپس جڑانوالہ روڈ پر پنجاب کالج کی آڑ میں قائم کیا گیا ہے۔ کیمپس کے قیام کیلئے ہائیرایجوکیشن کمیشن سے اجازت لی گئی ہے نہ اس کیلئے لازمی قرار دی گئی شرائط پوری کی گئی ہیں۔ نیوزلائن کے مطابق یونیورسٹی آف سنٹرل پنجاب لاہور نے فیصل آباد میں اپناغیرقانونی کیمپس قائم کرکھا ہے۔ جڑانواہ روڈ پر مکوآنہ کے قریب بنائے گئے کیمپس کے قیام کیلئے ہائیرایجوکیشن کمیشن سمیت کسی متعلقہ مجاز اتھارٹی سے اجازت نہیں لی گئی ۔ ہائیرایجوکیشن کمیشن کی طرف سے ملک بھر کی یونیورسٹیوں کے منظور شدہ کیمپسز کی لسٹ میں یوسی پی فیصل آباد کا شامل ہی نہیں ہے۔یوسی پی کا فیصل آباد میں کیمپس پنجاب کالج کی آڑ میں قائم کیا گیا ہے تاہم وہاں یو سی پی کے داخلے کئے جا رہے ہیں اور وہاں یو سی پی کے نام پر کلاسز لی جارہی ہیں۔ ذرائع کے مطابق یو سی پی کا یہ غیرقانونی کیمپس کئی سالوں سے چلایا جا رہاہے اور طلبا وطالبات کو دھوکہ دے کر کروڑوں روپے فیس کی مد میں ہتھیائے جا چکے ہیں۔ ایچ ای سی حکام کا کہنا ہے کہ یو سی پی نے فیصل آباد میں کیمپس کے قیام کیلئے درخواست ہی نہیں دی۔ اس حوالے سے ایچ ای سی واضح کر چکی ہے کہ غیرمنظور شدہ کیمپس غیرقانونی ہیں اور ان میں داخلہ دینے والے افراد کیخلاف قانونی کارروائی کی جانی چاہئے۔ ایچ ای سی کی طرف سے طلبہ اور ان کے والدین کو بھی وارننگ نوٹس جاری کیا جا چکا ہے کہ غیرقانونی اور غیرمنظور شدہ یونیورسٹیوں اور کیمپسز میں داخلہ نہ لیں۔ ایسی یونیورسٹیوں اور کیمپسز سے ڈگری لینے والوں کی ڈگری کی تصدیق ایچ ای سی سے نہیں ہو گی ۔ ڈگری کی تصدیق نہ ہونے پر طلبہ کو ملازمت میں مشکلات پیش آسکتی ہیں۔ اور غیرتصدیق شدہ ڈگری کی وجہ سے مستقبل میں طلبہ ملازمت سے فارغ بھی کئے جاسکتے ہیں۔

Related posts