فیصل آباد کے کرپشن کنگ محکموں کی زیر قیادت انٹی کرپشن سیمینار


فیصل آباد(احمد یٰسین)انٹی کرپشن ڈے پر محکمہ انسداد رشوت ستانی کے ریجنل ڈائریکٹر کا منعقد کردہ انٹی کرپشن سیمینار اپنی نوعیت کے حوالے سے منفرد رہا۔ ڈائریکٹر انٹی کرپشن ڈاکٹر ارشاد احمد نے انٹی کرپشن سیمینار کے دوران سٹیج پرصرف ان محکموں کو جگہ دی گئی جنہوں نے پنجاب کے سرکاری محکموں میں سے کرپشن کی ریس جیتی تھی۔محکمہ انٹی کرپشن کے ریکارڈ کے مطابق سال 2017کے دوران فیصل آباد میں کرپشن کی ریس محکمہ ریونیو جیت گیا ہے ۔فروغ کرپشن کی اس ریس میں پولیس دوسرے نمبر پر جبکہ بلدیاتی ادارے تیسرے نمبر پر رہے ہیں۔ ورلڈ انٹی کرپشن ڈے کے حوالے سے انٹی کرپشن فیصل آباد نے بھی ایم سیمینار کا انعقاد کیا لیکن اس اہم موقع پر ’’انٹی کرپشن ‘‘ کی مثال قائم کرنے والا کوئی محکمہ اس تقریب کی صدارت یا قیادت کرنے کیلئے نہ ملا۔ کرپشن کیخلاف آواز اٹھانے والوں کو بھی انٹی کرپشن حکام نے درخور اعتنا نہ سمجھا۔تقریب کے دوران ڈائریکٹر انٹی کرپشن نے 6شخصیات کو تمام وقت سٹیج پر بٹھائے رکھا جبکہ تقریب سے خطاب کرنے والی شخصیات بھی یہی تھیں۔ سال بھر کے دوران فیصل آباد ڈویژن میں کرپشن میں گولڈ میڈل حاصل کرنے والے محکمہ ریونیو کے ضلعی انتظامی انچارج ڈپٹی کمشنرفیصل آبادسلمان غنی اور ریونیوڈیپارٹمنٹس سمیت تمام محکموں کے ڈویژنل انچارج آفیسر کمشنر مومن آغا تقریب کے خاص مہمان اور سٹیج پر رونق افروز تھے۔ کرپشن کی ریس میں سلور میڈل حاصل کرنے والے محکمہ پولیس کے ڈویژنل انچارج آر پی او فیصل آباد بلال صدیق کمیانہ بھی سٹیج کی رونق بڑھانے کیلئے سٹیج پر موجود تھے۔ ان کے ساتھ پولیس کے ضلعی انچارج آفیسر سی پی او اطہر اسماعیل کو بھی سٹیج کی رونق بڑھانے کیلئے موجود رکھا گیا۔ سٹیج پر رونق افراز باقی دو شخصیات اس کرپشن ریس میں تیسری پوزیشن حاصل کرنے والے محکمہ بلدیات سے متعلقہ تھیں اور یہ دونوں شخصیات فیصل آباد کے دو سب سے بڑے بلدیاتی نمائندے چیئرمین ضلع کونسل زاہد نذیر اور میئر فیصل آباد رزاق ملک تھے۔ فیصل آباد کے انٹی کرپشن سیمینار سے باقی فوائد کیساتھ ایک اہم پیغام عوامی سطح پر یہ بھی گیا ہے کہ کرپشن کے ریکارڈ قائم کرنے والے محکموں کے سربراہان محکمہ انٹی کرپشن کے ریجنل ڈائریکٹر کیلئے اتنی اہمیت رکھتے ہیں کہ انٹی کرپشن سیمینار میں سب سے اہم حیثیت انہی تینوں ڈیپارٹمنٹس سے متعلقہ چھے شخصیات کو دی گئی جنہوں نے فیصل آباد میں کرپشن کے حوالے سے ریکارڈ قائم کیا اور پہلی تین پوزیشن حاصل کی ہیں۔

Related posts