فیصل آباد کے ہر علاقے میں سرکاری زمینوں پرمافیا قابض‘ ضلعی انتظامیہ تماشائی


فیصل آباد(ندیم جاوید)فیصل آباد میں ہر علاقے میں بااثر مافیاز نے پٹواریوں‘ نمبرداروں‘ اور علاقے کے ریونیو حکام کی ملی بھگت سے قیمتی سرکاری زمینوں پر قبضے جما رکھے ہیں ‘ انتظامیہ کو سرکاری زمینوں کا علم ہے اور نہ اس پر قابض بااثر مافیاز کیخلاف کارروائی کرنے کی ہمت کر پا رہی ہے۔ نیوزلائن کے مطابق لائلپور(فیصل آباد ) کی آباد کاری کے وقت سے ہی یہاں کے ہر گاؤں میں انگریز سرکار نے تالاب‘ چھپڑ‘ احاطے‘ صاف پانی کے کھال‘ گندے پانی کے نالے‘ ولیج پاتھ‘ کیٹل باتھ‘ روڑی‘ ٹینڈر‘ نمبرداری کاشت‘ اور دیگر کئی قسم کی اراضی سرکاری کنٹرول میں رکھ چھوڑی تھی۔محکمہ مال کے زیر کنٹرول ان زمینوں کے علاوہ ہر علاقے میں محکمہ نہر اورسیم ڈیپارٹمنٹ دیگر متعدد سرکاری محکموں کی اراضی بھی مختص تھی۔ یہ سرکاری اراضی شہر کے مرکزی چک نمبر 212میں بھی موجود تھی اور دور دراز کے چک جھامرہ میں بھی موجود رکھی گئی تھی۔ زمین تو اب بھی ہر علاقے میں ہے اور ہے بھی سرکار ہی کے نام پر مگر ان پر قابض سرکار نہیں رہی ۔ بااثر مافیاز نے ان زمینوں پر قبضے جما لئے ہیں اور سرکاری کو ٹکا سا جواب دے کر زمین کا قبضہ چھوڑنے سے انکاری ہیں۔تحصیل صدر‘ تحصیل سٹی‘ تحصیل جڑانوالہ‘ تحصیل سمندری‘ تحصیل تاندلیانوالہ‘ تحصیل جھمرہ سمیت کوئی علاقہ مافیاز کی دستبرد سے آزاد نہیں ہے۔ فیصل آباد کا کوئی گاؤں ایسا نہیں ہے جس کی سرکاری اراض پر کوئی نہ کوئی قابض نہ ہو۔ضلعی انتظامیہ کے حکام قبضہ مافیاز کی ان کارستانیوں سے آگاہ ہونے کے باوجود ان کیخلاف کسی قسم کی کارروائی کرنے سے گریزاں ہیں۔

Related posts