نواز شریف اور مریم نواز کی ضمانت پر رہائی کا قومی امکان


اسلام آباد(حامد یٰسین)قانونی ماہرین کی طرف سے قومی امکان ظاہر کیا جا رہا ہے کہ سابق وزیر اعظم میاں نواز شریف ‘ مریم نواز اور کیپٹن صفد ر کی ضمانت ہو جائے گی ۔ ہائی کورٹ میں ان کی اپیل کی سماعت منظور ہوتے ہی ان کی ضمانت ہونے کی قومی امید ہے۔ قانونی ماہرین کا کہنا ہے کہ ہوسکتا ہے پہلی سماعت پر ضمانت منظور نہ ہو مگرایسا ہو بھی سکتا ہے تاہم اپیل کی باضابطہ سماعت شروع ہونے پر ضمانت ہونے کے امکانات زیادہ ہوتے ہیں۔ قانونی ماہرین کے مطابق عدالت کو یرجانبداری برقرار رکھنے کیلئے ملزمان کو اوپن مواقع فراہم کرنا ہوتے ہیں۔ احتساب عدالت کے فیصلے کیخلاف اپیل منظور کرنے کے بعد کوئی جواز نہیں رہ جائے گا کہ عدالت ملزمان کی ضمانت منظور نہ کرے۔ بعض حلقوں کی طرف سے یہ امکان بھی ظاہر کیا جا رہا تھا کہ ایون فیلڈ ریفرنس میں اپیل منظور اور ضمانت ہوتے ہی کسی دوسرے ریفرنس میں میاں نواز شریف اور مریم نواز کو سزا سنا کر گرفتار کرلیا جائے گا مگر احتساب عدالت کے جج محمد بشیر کی طرف سے دیگر دونوں ریفرنسز کی سماعت سے انکار کے بعد اس کا امکان کم ہوگیا ہے کیونکہ احتساب عدالت کے نئے جج کی تعیناتی یا کیسز کی دوسری عدالت میں منتقلی تک دیگر دو ریفرنسز میں سزا ممکن نہیں ہوگی ۔ امکان یہی ہے کہ اس دوران ہائی کورٹ میں اپیل اور درخواست ضمانت منظور ہوجائے گی۔سیاسی حلقوں کے مطابق میاں نواز شریف اور مریم نواز کی ضمانت پر رہائی مسلم لیگ ن کیلئے ایندھن ثابت ہوگی۔ دونوں الیکشن سے پہلے جیل سے باہر آگئے تو عوام میں ان کیلئے ہمدردی کے جذبات بڑھ جائیں گے اور ووٹر کا ان کی طرف رجحان بڑھے گا جو الیکشن میں ن لیگ کی کامیابی کے امکانات بڑھا دے گا اور اس کا سب سے زیادہ نقصان پی ٹی آئی کو ہوگا۔

Related posts