وزارت عظمیٰ نہ ملنے پر شہباز شریف شدید ناراض

اسلام آباد(نیوزلائن)میاں نواز شریف کے بعد وزارت عظمیٰ کو اپناحق سمجھنے والے میاں شہباز شریف وزیر اعظم نہ بنائے جانے پر پارٹی قائد سے شدید ناراض ہیں۔ بھائی سے ناراضگی کا غصہ وہ وفاقی معاملات میں عدم دلچسپی اور پارٹی امور کو نظر انداز کرکے ظاہر کررہے ہیں۔ نیوزلائن کے مطابق وعدے کے باوجودوزارت عظمیٰ نہ ملنے میاں شہباز شریف اپنے بھائی میاں نواز شریف سے شدید ناراض ہیں وہ اپنی ناراضگی کا اظہار فیملی میں متعدد افراد سے کر چکے ہیں جبکہ پارٹی میں ان کے قریبی حلقے بشمول چوہدری نثار علی اس معاملے سے آگاہ ہیں۔ذرائع کے مطابق مری کی میٹنگ میں جب یہ فیصلہ کیا گیا کہ شاہد خاقان عباسی کو آئندہ مدت کیلئے پرائم منسٹر برقرار رکھا جائے گا تو میاں شہباز شریف نے فوری اس پر رد عمل دیا اور شدید غصہ اور ناراضگی کا اظہار کیا مگر پارٹی کے اکثریتی پارٹی رہنما میاں شہباز شریف کو وزیر اعظم بنانے کے خواہاں نہ تھے اور انہوں نے عباسی کوبا قی مدت کیلئے وزیراعظم بنانے کے فیصلے کو سراہا۔اور اس پر میاں نوازشریف کی حمائت کی جس پر میاں شہباز شریف مجبور ہو گئے۔ وہ اس فیصلے کے بعد مصروفیت کا بہانہ کر کے میٹنگ سے نکلنا چاہتے تھے مگر میاں نواز شریف نے انہیں روک لیا اور نکلنے نہ دیا۔ ذرائع کے مطابق میاں نواز شریف اور میاں شہباز شریف کے درمیان ماضی میں بھی اختلافات اور پارٹی پر اپنا اپنا قبضہ جمانے کی خبریں سامنے آتی رہی ہیں ۔ پانامہ لیکس کیس کے حوالے سے بھی دونوں بھائیوں اور ان کی فیملیز کے مابین دوریاں دیکھی گئیں اور اب وزارت عظمیٰ کے حصول کیلئے بھی دونوں بھائی ایک پوائنٹ پر متفق نہیں ہیں۔

Related posts

Leave a Comment