پانامہ لیکس : لندن میں مقیم پاکستانی کے خط کے دھماکے دار انٹری

اسلام آباد(نیوزلائن)سپریم کورٹ میں زیر سماعت پانامہ لیکس کیس نے ایک اور سنسنی خیز رخ اختیار کر لیا ہے۔قطری شہزادے کے بعد اب برطانیہ میں مقیم پاکستانی افسر کے صاحبزادے کی انٹری ہو گئی ہے۔ جس نے سپریم کورٹ کو خط لکھ کر شریف خاندان کے خلاف کچھ اہم تفصیلات سے نہ صرف آگاہ کر دیا ہے بلکہ خود سپریم کورٹ پیش ہوکر بیان قلمبند کرانے پر بھی آمادگی ظاہر کی ہے۔ ’ڈیلی ٹائمز‘ کے مطابق لندن سٹاک ایکسچینج سے ریٹائرڈ افسر مسعود احمد قاضی کے صاحبزادے کاشف مسعود نے اپنے ایک خط میں کہاکہ ماضی کے اس کے خاندان کے شریف خاندان کے ساتھ کچھ تعلقات تھے تاہم وزیر خزانہ اسحاق ڈار کی ان کے والد مسعود قاضی سے تلخ کلامی ہوئی تھی۔ کاشف مسعود کا کہنا ہے کہ شریف خاندان نے مے فئیر فلیٹس منی لانڈرنگ کی رقم سے خریدے اور اس رقم کی منتقلی ان کے والد کی رضا مندی کے بغیر ان کے نام سے بنائے گئے جعلی اکائونٹس سے منتقل کی گئی۔کاشف مسعود نے اپنے 74صفحات پر مبنی خط میں کہا ہے کہ وہ ایک پاکستانی ہونے کے ناتے سپریم کورٹ کی کیس حل کرنے میں معاونت کرنا چاہتے ہیں۔انھوں نے کہا کہ اگر ضرورت ٌپڑے تو وہ اپنی رپورٹ ،کاغذات اور کچھ اہم دستاویزات بھی سپریم کورٹ بھیج سکتے ہیں۔واضح رہے کہ یہ طےئ ہونا باقی ہے کہ خط عدالت میں قابل قبول ہے یا نہیں۔ ادھر عمران خان نے خط کی اطلاع ملتے ہی پارٹی کے عہدیدارووں کو کاشف مسعود سے رابطہ کرنے کی ہدایت کی ہے۔

Related posts