پانامہ کیس‘ نواز شریف کیخلاف ثبوت مکمل‘ نااہلی کا امکان

اسلام آباد(نیوزلائن) پانامہ لیکس کیس میں سنگین مسائل سے دوچار مسلم لیگ (ن ) اور پریشانی میں پھنسے وزیر اعظم کی مشکلات میں اضافہ ہو گیا ہے۔ دبئی کی لاء فرم نے کیپیٹل ایف زی ای میں وزیراعظم کی جانب سے ملازمت کرنے کی تصدیق کر دی ہے۔ تفصیلات کے مطابق منگل کے روز سپریم کورٹ میں پاناما کیس کی اہم سماعت ہوئی۔ سماعت کے دوران خصوصی بینچ کو دبئی کی لاء فرم کی جانب سے خصوصی دستاویز فراہم کی گئی۔ دستاویز میں لاء فرم نے تصدیق کی ہے کہ نا صرف وزیراعظم نواز شریف آف شور کمپنی کیپیٹل ایف زی ای میں ملازمت کرتے رہے بلکہ یہ کمپنی شریف خاندان کی ہی ملکیت بھی ہے۔ لاء فرم نے مزید بتایا ہے کہ دبئی کے قوانین کے مطابق کسی بھی کمپنی کے ملازم کو بذریعہ بینک تنخواہ دی جاتی ہے اور اس کی تمام تفصیلات حکومت کو فراہم بھی کی جاتی ہیں۔ اگر کسی کمپنی کی جانب سے ملازمین کو بذریعہ بینک تنخواہ نہیں دی جاتی تو اس کیخلاف کاروائی کی جاتی ہے اور وہ کمپنی اپنا وجود برقرار نہیں رکھ سکتی۔ اس تمام صورتحال میں دیکھا جائے تو کیپیٹل ایف زی ای کئی برس تک قائم رہی جس سے ثابت ہوتا ہے کہ نواز شریف باقاعدہ اس کمپنی سے تنخواہ وصول کر رہے تھے اور اس کی تفصیلات دبئی کی حکومت کے پاس موجود بھی ہوں گی۔لاء فرم نے پاناما کیس جے آئی ٹی کی جانب سے سپریم کورٹ میں جمع کروائے گئے وزیراعظم کی ملازمت کے معاہدے کے درست ہونے کی بھی تصدیق کر دی ہے۔ قانونی ماہرین کے مطابق اب وزیراعظم کے اس کیس میں بچ جانے کے امکانات نا ہونے کے برابر رہ گئے ہیں۔ وزیراعظم کی نااہلی کے اب واضح امکانات ہیں۔

Related posts

Leave a Comment