پنجاب حکومت کو وائس چانسلر تعیناتی کا اختیار نہیں‘ 4وی سی فارغ


dr-mujahid-kamran
لاہور(نیوز لائن)لاہور ہائی کورٹ نے پنجاب کے چار مختلف جامعات میں تعینات وائس چانسلرز کو فارغ کرنے اور ہائیر ایجوکیشن کمیشن کو ان یونیورسٹیوں میں وائس چانسلرز کی کی تعیناتی قانونی طریقہ کار کے مطابق کرنے کی ہدائت کی ہے۔ نیوز لائن کے مطابق عدالت عالیہ میں ایک شہری نے رٹ دائر کی تھی کہ پنجاب یونیورسٹی کے وائس چانسلر کی تعیناتی غیرقانونی طریقے سے کی گئی ہے۔ ان کی تعیناتی پنجاب حکومت نے کی ہے جبکہ پنجاب حکومت کو ایسا کرنے کا اختیار ہی نہیں تھا۔ ہائی کورٹ کے جسٹس شاہد کریم نے کیس کی سماعت کے بعد فیصلہ سنا دیا۔ فیصلہ میں پنجاب حکومت کی طرف سے یونیورسٹیوں میں وائس چانسلرز کی تعیناتی کو غیر قانونی قرار دیا گیا اور پنجاب یونیورسٹی کے وائس چانسلر مجاہد کامران‘ سرگودھا یونیورسٹی‘ لاہور کالج فار ویمن یونیورسٹی اور نواز شریف انجینئرنگ یونیورسٹی کے وائس چانسلرز کو عہدے سے ہٹانے کا حکم دیدیا۔ عدلات عالیہ نے اپنے فیصلے میں ہائیر ایجوکیشن کمیشن کو ہدائت کی ہے کہ چاروں یونیورسٹیوں میں وہاں کے سینئر ترین پروفیسر کو قائمقام وائس چانسلر کا عارضی چارج دیا جائے اور مستقل وائس چانسلر کی تعیناتی کیلئے اخبار میں اشتہار دیا جائے۔ وائس چانسلرز کی تعیناتی قوانین اورقواعد کے مطابق ہائیر ایجوکیشن کمیشن کرے۔ پنجاب حکومت سمیت دیگر اتھارٹیز اس معاملے میں مداخلت نہ کریں۔
uos

Related posts