پہلی بارجنرل نشست پر اقلیتی رہنما رکن قومی اسمبلی منتخب


اسلام آباد(نیوزلائن)پیپلزپارٹی نے ایک اور میدان مار لیا۔ ملکی تاریخ میں پہلی بار کسی اقلیتی رہنما کوجنرل نشست پر رکن قومی اسمبلی بنوانے کا اعزاز بھی پی پی پی کے ہاتھ آگیا۔نیوزلائن کے مطابق تھرپارکر سے ایم این اے بننے والے ڈاکٹر مہیش ملانی پی پی پی کے امیدوار تھے ۔ ان سے قبل کوئی اقلیتی رہنما جنرل نشست پر قومی اسمبلی کارکن منتخب نہیں ہوسکا ۔ ڈاکٹر مہیش ملانی ہندو اقلیت سے تعلق رکھتے ہیں اور قومی اسمبلی کے حلقہ این اے 222سے پی پی پی کے امیدوار تھے۔ ڈاکٹر مہیش ملانی کو ایک لاکھ 6ہزار 630ووٹ ملے ۔ ان کی مدمقابل جی ڈی اے اور تحریک انصاف کے مشترکہ امیدوار ارباب ذکاء اللہ تھے جنہوں نے 87ہزار 251ووٹ حاصل کئے۔ ڈاکٹر مہیش ملانی کے انتخاب کو قومی حلقے انتہائی اہمیت کا حامل قرار دے رہے ہیں۔ جبکہ عالمی سطح پر بھی مہیش ملانی کے انتخاب اور اس بارے پیپلزپارٹی کے کردار کو سراہا جا رہا ہے۔ ڈاکٹر مہیش ملانی سے پہلے مختلف اقلیتوں کے نمائندے مخصوص نشستوں پر تو قومی اسمبلی میں پہنچتے رہے ہیں تاہم جنرل نشست پر کسی اقلیتی رہنما کا یہ پہلا موقع ہے۔ ان سے قبل پی پی پی نے ایک ہندو خاتون کرشنا کماری کوسینیٹ میں ہنچا کر پہلی خاتون اقلیتی سینیٹر بنوانے کا اعزاز بھی اپنے نام کیا تھا۔جبکہ پاکستان کی پہلی خاتون وزیر اعظم اور پہلی خاتون سپیکر قومی اسمبلی کا اعزاز بھی پیپلزپارٹی کے پاس ہی ہے۔

Related posts