پیپلزپارٹی ختم سمجھنے والوں کا کامیاب ریلیوں سے جواب دیدیا


ننگرپارکر(نیوزلائن)پاکستان پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹوزرداری نے کہا ہے کہ وہ تمام قوتیں جو سمجھتی تھیں کہ بھٹو اور بے نظیر کی شہادت کے بعد پیپلز پارٹی ختم ہوگئی ، ملک بھر میں کامیاب ریلیاں ان قوتوں کو جواب ہے،تھر میں پاکستان کا جھنڈا پیپلز پارٹی کی وجہ سے لہرا رہا ہے،اتفاق رائے کے بغیر ڈیمز کی تعمیر کو عوام نہیں مانیں گے، یہ 1973 کے آئین کے خلاف سازش ہے، شہید بھٹو نے بھارت سے جنگی قیدی اور تھر کی سرزمین لی تھی،پیپلزپارٹی کے خلاف ہمیشہ کٹھ پتلی اتحادوں کو لایا گیا لیکن ان اتحادوں کو شکست ہوئی۔اس بار بھی سندھ میں کٹھ پتلی اتحاد کو شکست ہو گی۔ننگر پارکر میں انتخابی جلسہ سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ بے نظیر انکم سپورٹ پروگرام کو پوری دنیا مانتی ہے کہ غربت ختم کرنے کے لیے اہم قدم ہے۔سندھ میں غریب عورتوں کو بلاسود قرضے دیتے ہیں تاکہ وہ اپنی اور اپنے خاندان کی مدد کریں اور پاکستان کی معیشیت میں کردار ادا کریں۔بلاول بھٹو نے جلسے کے دوران دعوی کیا کہ واحد ہمارا منشور جو پاکستان سے غذائی قلت دور کرنے میں مدد کرے گا۔ ہم فوڈ کارڈ اور بھوک مٹا پروگرام سے روزگار اور غذائی قلت کو دور کریں گے۔پی پی چیئرمین نے کہا کہ آپ تک میٹھا پانی پہنچائیں گے ہم نے یہاں ایئرپورٹ بنایا جس سے روز گار اور ترقی آئے گی۔انہوں نے کہا کہ یہ تاریخ ہے کہ پی پی کے مقابلے میں کٹھ پتلی اتحادوں کو کھڑا کیا جاتا ہے اور آپ نے ہمیشہ ان اتحادوں کو شکست دی ہے، اس بار بھی یہ اتحاد ہاریں گے۔ یہ منافقت اور یوٹرن کی سیاست ہے۔ ایک طرف کرپشن کی بات ہوتی ہے دوسری طرف دہشت گردوں کے ساتھ بات کرتے ہیں۔بلاول نے کہا کہ بغض بھٹو میں کس حد تک پہنچے ہیں کہ ہر ایشو پر کمپرومائز کرنے کو تیار ہیں۔ پانی کی منصفانہ تقسیم کو بحث سے حل کیا جانا چاہیے۔پیپلزپارٹی نے دعوی کیا کہ مخالف اتحاد کا منصوبہ ہے کہ منتخب ہونے کے بعد بے نظیر انکم سپورٹ پروگرام کو ختم کردیا جائے۔ ہم ان کی سیاست ختم کردیں گے لیکن پروگرام ختم نہیں ہونے دیں۔ انہیں پتا ہے کہ عوام پی پی کے ساتھ ہے۔ اگر وہ پاپولر ہوتے تواتحاد نہ بناتے، پی پی کے جیالے ضیا اور مشرف سے نہیں ڈرے تو آپ سے کیوں ڈریں۔

Related posts