پی آئی اے کا طیارہ گر کر تباہ‘ 47مسافر سوار تھے

ایبٹ آباد(نیوزلائن)چترال سے اسلام آباد جانے والا پی آئی اے کا مسافر طیارہ حویلیاں کے قریب پہاڑی علاقے میں گر کر تباہ ہوگیا جس میں معروف نعت خواں جنید جمشید بھی اپنے اہل خانہ کے ہمراہ سوار تھے۔
نیوزلائن کے مطابق چترال سے اسلام آباد جانے والا پی آئی اے کا مسافر طیارہ پی کے 661 ایبٹ آباد میں حویلیاں کے قریب گر کر تباہ ہوگیا، ابتدائی اطلاعات کے مطابق طیارے کے انجن میں خرابی کے باعث حادثہ پیش آیا جب کہ طیارے کے پائلٹ صالح جنجوعہ اور احمد جنجوعہ معاون پائلٹ ہیں جو آپس میں بھائی ہیں۔ اس کے علاوہ میں طیارے میں 2 ایئرہوسٹس صدف فاروق، عاصمہ عادل سوار تھیں۔ طیارے میں 31 مرد، 9 خواتین اور 2 بچے بھی سوار تھے جن میں معروف نعت خواں جنید جمشید بھی اپنے اہل خانہ کے ہمراہ تھے جبکہ ڈپٹی کمشنر چترال بھی اسی طیارے سے سفر کررہے تھے۔
اسسٹنٹ کمشنر چترال نے ڈپٹی کمشنر چترال اور جنید جمشید کے طیارے میں موجود ہونے کی تصدیق کرتے ہوئے کہا کہ جنید جمشید اپنے اہل خانہ کے ہمراہ اس طیارے میں سوار تھے۔ جنید جمشید سیٹ نمبر 27 سی اور اہلیہ 27 اے پر بیٹھی تھیں۔
طیارہ صبح اسلام آباد سے مسافروں کو لے کر چترال گیا تھا جب کہ طیارے نے شام 4 بج کر 45 منٹ پر اسلام آباد پہنچنا تھا تاہم لینڈنگ سے کچھ ہی دیر پہلے طیارے کا ریڈار سے رابطہ منقطع ہوگیا تھا، اس سے قبل پائلٹ نے مدد کے لیے ایمرجنسی کال کی تھی جس میں انہوں نے کہا کہ طیارے کا ایک انجن بند ہوگیا ہے، جس کی وجہ سے انہیں پرواز میں مشکلات کا سامنا ہے۔
ڈپٹی کمشنر ایبٹ آباد نے اس بات کی تصدیق کرتے ہوئے کہا کہ مسافر طیارہ حویلیاں کے قریب پہاڑ سے ٹکرانے کے بعد گر کر تباہ ہوا۔ پی آئی اے کے حادثے کے شکار ہونے والے طیارے میں موجود مسافروں کی فہرست جاری کردی گئی ہے۔ طیارے میں 3 غیر ملکی بھی سوار تھے جن میں شاہی خاندان کا شہزادہ فرحت اور بیٹی بھی سوار تھی۔
ادھر ترجمان پی آئی اے نے حادثے کی تصدیق کرتے ہوئے کہا کہ طیارے میں عملے سمیت 40 افراد سوار تھے جب کہ طیارے کی تلاش کے لیے تمام وسائل بروئے کار لارہے ہیں اور ایمرجنسی رسپانس سینٹر بھی قائم کردیا گیا ہے اور مزید معلومات کے لیے ان نمبرز پر رابطہ کیا جاسکتا ہے

02199044376،

02199044394۔

دوسری جانب وزیرداخلہ نے ریسکیو اداروں کو فوری اقدامات کی ہدایت کی ہے۔ عینی شاہدین کے مطابق طیارے کو پہاڑ سے ٹکرانے کے بعد گرتے ہوئے دیکھا جس کے بعد آگ کے شعلے بلند ہوئے اور طیارہ مکمل طور پر جل کر راکھ ہوگیا:۔
حادثے کا شکار ہونے والے پی آئی اے کے بد قسمت طیارے میں 9 خواتین 31مردوں اور دو شیر خوار بچوں اور عملے کے پانچ ارکان سمیت 47افراد سوار تھے۔انتظامیہ کی جانب سے جاری کر دہ فہرست کے مطابق طیارے کے مسافروں میں عابد قیصر ٗ احسن ٗ احترام الحق عائشہ ٗ اکبر علی ٗ اختر محمود ٗ امیر شوکت ٗآمنہ احمد ٗ ماہ رخ احمد ٗعاصم وقاص ٗعتیق احمد ٗفرح ناز ٗ فرحت عزیز ٗگوہر علی ٗگل حوراں ٗ حاجی نواز ٗ ہان کیانگ ٗ ہارلڈ کیسلر ٗحسن علی ٗ ہروگ ایچل بینگر ٗ جنید جمشید ٗنیہا جنید ٗمحمود عاطف ٗ مرزا گل ٗ فرحان علی ٗ محمد علی خان ٗ محمد خالد مسعود ٗ محمد خان ٗ محمد خاور ٗ محمد نعمان شفیق ٗ محمد تکبیر خان ٗ نثار الدین ٗ اسامہ احمد وڑائچ ٗ رانی مہرین ٗسلمان زین العابدین ٗسمیع ٗثمینہ گل ٗ شمشاد بیگم ٗ طیبہ عزیز ٗ تیمور ارشد ٗ عمارہ خان اور زاہدہ پروین شامل ہیں۔

Related posts