ڈی جی پنجاب فوڈ اتھارٹی کی زہر بنانے والوں سے خفیہ ڈیل

فیصل آباد(ندیم جاوید)پنجاب فوڈ اتھارٹی نے زہر بنا کر عوام کی رگوں میں گھولنے والوں سے خفیہ ڈیل کر لی۔ زہریلا گھی بنانے والے سرمایہ داروں کو زہریلا گھی مارکیٹ میں فروخت کرنے اور عوام کی زندگیوں سے کھیلنے کی کھلی چھٹی دیدی گئی۔ڈی جی صرف دکھاوے کیلئے چھوٹے دکانداروں اور غریبوں کیخلاف کارروائیاں کرکے نمبر ٹانگنے میں مصروف ہیں۔ نیوزلائن کے مطابق پنجاب فوڈ اتھارٹی اپنے اصل فرض کو بھلا کر غریب دکانداروں اور چھوٹے خوانچہ فروشوں ‘ بیکریوں ‘ پرچون فروشوں‘ دودھ فروشوں کیخلاف کارروائیوں میں مصروف ہے جبکہ مینوفیکچررز کیخلاف ان کی کوئی کارروائی عملی نتائج نہیں دے رہی۔ پنجاب میں فروخت کئے جانے والے 70سے زائد برانڈز کے گھی و کوکنگ آئل کو لیبارٹری ٹیسٹ سے زہریلاثابت کیا اور اس کا استعمال انسانی صحت کیلئے سلوپوائزننگ زہر کے مترادف قرار دیا ۔ پنجاب فوڈ اتھارٹی نے ان گھی و کوکنگ آئل کے خلاف خصوصی مہم چلانے کا اعلان کیا اور زہریلا قرار دئیے گئے گھی کو مارکیٹ سے اٹھانے اور اس کے استعمال پر پابندی عائد کرنے کے اعلانات کئے مگر پھر اچانک ہی ڈی جی پنجاب فوڈ اتھارٹی نے تمام کارروائی رکوا دی۔ گھی مینوفیکچررز کیساتھ ایک خفیہ ڈیل کرکے ڈی جی نے تمام مضر صحت گھی کھلے عام فروخت کرنے کی اجازت دیدی۔ خفیہ ڈیل کو تحفظ دینے کیلئے گھی ملوں کو معمولی جرمانے کرنے کا ڈرامہ رچایا گیا اور صوبہ بھر میں پنجاب فوڈ اتھارٹی کے حکام کو گھی و کوکنگ آئل کیخلاف کارروائیوں سے روک دیا گیا۔ گھی کمپنیاں ہنوز عوام کی جان و مال سے کھلواڑ کر رہی ہیں مگر جگہ جگہ ’’ماما جی کی عدالت ‘‘ لگا کر بیکریوں اور غریب دکانداروں کو بھاری جرمانے کرنے والے پنجاب فوڈ اتھارٹی کے ڈی جی اور دیگر حکام گھی کے نام پر زہر فروخت کرنے والوں کے سامنے بھیگی بلی بنے ہوئے ہیں۔

Related posts

Leave a Comment