کوئی سیاسی جماعت تمام حلقوں میں امیدوار کھڑے نہ کرسکی


اسلام آباد(حامد یٰسین)الیکشن 2018میں کوئی سیاسی جماعت ملک بھر کے تمام حلقوں میں امیدوار کھڑے کرنے میں کامیاب نہ ہوسکی۔ پی ٹی آئی ‘ ن لیگ‘ پی پی پی سمیت کسی بھی جماعت کو تمام حلقوں سے امیدوار میسر نہ آئے۔ سب سے زیادہ امیدوار تحریک انصاف نے میدان میں اتارے جبکہ دوسرے نمبر پر پیپلزپارٹی رہی۔ نیوزلائن کے مطابق کسی بھی سیاسی پارٹی نے ملک کے تمام حلقوں سے امیدوار کھڑے نہیں کئے۔ الیکشن 2018میں ملک بھر کے 844حلقوں میں انتخابات ہورہے ہیں۔ قومی اسمبلی کے 272‘ پنجاب اسمبلی کے 292‘ سندھ اسمبلی کے 130‘ خیبر پختونخواہ اسمبلی کے 99 اور بلوچستان اسمبلی کے 51حلقوں میں انتخابی میدان سجاہوا ہے۔ الیکشن کمیشن کی رپورٹ کے مطابق تحریک انصاف نے بلے کے نشان پر الیکشن لڑنے کیلئے مجموعی طور ملک بھر سے 769امیدوار میدان میں اتارے ہیں۔ پیپلزپارٹی کا ٹکٹ رکھنے والے 642 امیدوارتیر کے نشان پر الیکشن لڑ رہے ہیں جبکہ مسلم لیگ ن نے 639امیدواروں کو شیر کے نشان پر الیکشن لڑنے کیلئے انتخابی میدان میں اتارا ہے۔متحدہ مجلس عمل کے نشان کتاب پر 583امیدوار الیکشن لڑ رہے ہیں۔ تحریک لبیک پاکستان کے نشان کرین پر 556امیدوار ‘ تحریک اللہ اکبر کے نشان کرسی پر 240امیدوار‘ آل پاکستان مسلم لیگ کے نشان عقاب پر 194امیدوار ‘ عوامی نیشنل پارٹی کے نشان لالٹین پر 187امیدوار‘ پاک سرزمین پارٹی کے نشان ڈولفن پر 187امیدوار‘ گرینڈ ڈیموکریٹک الائنس کے نشان ستارہ پر 114امیدوار‘ تحریک لبیک اسلام کے نشان توپ پر 100امیدوار‘ ایم کیو ایم کے نشان پتنگ پر 94 امیدوارجبکہ پاکستان مسلم لیگ کے نشان ٹریکٹر پر 44امیدوار انتخابی میدان میں ہیں۔ 25جولائی کو ہونیوالی پولنگ میں کس کے حق میں فیصلہ آئے گا اور کتنی نشستیں کون جیت پائے اس کا فیصلہ 25جولائی کی شام ہی سامنے آئے۔

Related posts