ٹرمپ کو اب ’’بھولا‘‘ سمجھنا چھوڑ دیجئے

گزشتہ برس کی آخری سہ ماہی کے دوران جب امریکی صدارتی انتخاب سے متعلق مارا ماری اپنے عروج پر تھی تو دنیا بھر کے میڈیا کی نقالی میں ہمارے کئی تجزیہ نگار بھی ڈونلڈٹرمپ کو دیوانہ سمجھ کر نظرانداز کرتے رہے۔ انتخابی عمل کی حرکیات پر ہم پاکستانی ویسے بھی اعتبار نہیں کرتے۔ سازشی تھیوریوں کے مارے ہمارے ذہن اس بات پر بضد رہتے ہیں کہ ’’اصل گیم‘‘ درحقیقت کہیں ’’اور Set‘‘ ہو چکی ہوتی ہے۔ انتخابی عمل تو اس گیم کو توڑ تک پہنچانے کا محض ایک بہانہ ہوتا…

Read More

فاطمہ جناح کے قتل کی تحقیقات اور وعدے کیاہوئے؟

محترمہ فاطمہ جناح بانی پاکستان محمد علی جناح کی نہ صرف خیال رکھنے والی مشفق بہن بھی تھیں بلکہ وہ جناح صاحب کی سیاسی شریک کار بھی تھیں۔ جناح صاحب کی وفات کے بعد لوگ انہیں اسی قدر منزلت سے دیکھتے تھے جس طرح جناح کو۔ لیکن یہ ایک تلخ حقیقت ہے کہ جناح صاحب کی وفات کے بعد انہیں سیاست سے دور رکھنے کی ہر ممکن کوشش کی گئی۔حقائق سے معلوم ہوتا ہے کہ اس وقت کی حکومت اور انتظامیہ کسی صورت بھی نہیں چاہتی تھی کہ فاطمہ جناح…

Read More

اداروں کو دھمکانے والی خلائی صحافتی مخلوق

پاکستان میں جمہوریت کو کبھی آزادی سے کام کرنے اور پھر اس نظام کے ثمرات پوری طرح عوام تک پہنچانے کا موقع نہ مل سکا۔ یہ نظام ایک سال کے لئے آئے، دوسال، تین سال یا بظاہر پانچ سال کے لئے بھی، اس کی ساری صبحیں اور شامیں دشمنوں کے ساتھ گزرتی ہیں مگر’’آزادی صحافت‘‘کے بعد سے تو ایک عجیب الخلقت مخلوق رات آٹھ بجے کے بعد مختلف چینلز پر نمودار ہوتی ہے۔ اس کے چار ہاتھ، چار ٹانگیں، ماتھے پر ایک اضافی آنکھ اور پائوں ٹیڑھے ہوتے ہیں۔ کہا…

Read More

میڈیا کے ذریعے پھیلائی وحشت کا توڑ

میرے ٹی وی پروگرام کے لئے مواد جمع کرنے والے بچوں کو خیال آیا کہ کیوں نہ کیمرہ اور مائیک لے کر اسلام آباد کے بازاروں میں جایا جائے۔ صرف اس سوال کے ساتھ کہ وہاں موجود لوگ ’’ڈان‘‘ اخبار میں 6اکتوبر2016ء کی صبح چھپی خبر کی وجہ سے اُٹھے طوفان کے بارے میں کیا جانتے اور محسوس کرتے ہیں۔چند گھنٹوں کے بعد میری ٹیم جو تبصرے،جنہیں ہم ٹی وی کی زبان میں Vox Popیعنی’’آوازِ خلق‘‘کہتے ہیں،لے کر آئی تو Sounds on Tapeمخفف جس کا Sotsہوتا ہے،میں دیکھ اور سن…

Read More

یکم مئی اور پاکستانی مزدور

پاکستان میں یکم مئی اور اس کی تاریخ کو متعارف کرانے کا سہرا پاکستان پیپلز پارٹی کے بانی اور سابق وزیر اعظم ذوالفقار علی بھٹو کو جاتاہے، ایوب خان کے زمانے میں پاکستان میں 22 سرمایہ داروں کا ذکر ہوتا تھا ان میں ایک ایوب خان خود تھا جو گندھارا انڈسٹریز کا مالک تھا۔ ایوب خان کی کابینہ سے علیدہ ہونے کے بعد ذوالفقارعلی بھٹونے 30 نومبر1967 کو بائیں بازو سے تعلق رکھنے والے اپنے ساتھیوں کے ساتھ پاکستان پیپلز پارٹی کی بنیاد رکھی، پیپلز پارٹی کے چار رہنما اصول…

Read More