جے آئی ٹی تعریف کی مستحق ہے

شریفوں کے پوشیدہ اورغیراعلانیہ مالیاتی امور کا کھوج لگانے والی جوائنٹ انوسٹی گیشن ٹیم سے اس کارکردگی کی توقع نہ تھی ۔ لگتا نہیں تھا کہ وہ اتنے آزادانہ طریقے سے کام کرسکے گی۔ ہم میں سے زیادہ تر کا خیال تھا کہ اس پر حکومت کا کنٹرول ہوگا۔ ہم سوچتے تھے کہ وزیر ِ داخلہ، جو شیکسپیئر کے مقولے، ”اختصار میں دانائی ہے‘‘، کی حکمت کو تسلیم کرنے سے انکاری ہیں، یا وزیر ِاعظم آفس میں سے کوئی اور اس پر اثر انداز ہونے میں کامیاب ہوجائے گا۔ لیکن…

Read More

دو ٹکے کی تحقیق

پی ٹی آئی اس حکمت عملی پر خراج تحسین کی مستحق ہے کہ گزشتہ چار سالوں کے دوران اس نے سیاست اور الزام تراشی کے سارے کھیل کو اس ہوشیاری کے ساتھ مسلم لیگ (ن) اور کسی حد تک پیپلز پارٹی کے کورٹ میں رکھا کہ خود اس کی پارٹی کی اندرونی حالت اورخیبر پختونخوا کی ناکام ترین حکومت کی طرف کسی کی توجہ کو جانے ہی نہیں دیا ۔ مجھے یقین ہے کہ اگر پی ٹی آئی کی اندرونی صورت حال دنیا کی نظروں کے سامنے آچکی ہوتی تو…

Read More

بزدل خان بنام عسکری خان

بِگ برادر! السلامُ علَیکم۔ احترام‘ خوف اور رُعب کے جذبات کے ساتھ آپ سے براہ راست مخاطب ہونے کی جرأت کر رہا ہوں، امید ہے آپ میری اس کوشش کو ایک بزدل کا مذاق سمجھ کر نظرانداز کر دیں گے۔ یہ نامہ لکھتے ہوئے میری انگلیاں لرز رہی ہیں‘ ہاتھ کپکپا رہے ہیں اور ٹانگیں کانپ رہی ہیں، یہ سب اس لیے ہو رہا ہے کہ ریاست کے سب سے ”طاقتور‘‘ سے معاشرے کا سب سے زیادہ کمزور اور بزدل محو کلام ہے۔ بڑے بھائی! آپ ہمارے ہی ہیں کسی…

Read More

انصاف جلد فراہم ہو جائیگا

مسئلہ محض نواز شریف کو حکومت سے فارغ کرنا نہیں۔ موصوف کی ذات اور خاندان کی ذلت ورسوائی بھی ہے۔ آغاز اس کھیل کا 1990ءکی دہائی میں ہوا تھا۔ صدر ہمارے ان دنوں غلام اسحاق خان ہوا کرتے تھے۔ وہ ریاست کے دائمی اداروں کی سوچ اور ترجیحات کے مجسم ترجمان تھے۔ ہماری سول اور عسکری اشرافیہ انہیں ”بابا“ پکارتی تھی۔ ان کی دیانت کے بے تحاشہ چرچے تھے۔ تاثر عمومی یہ بھی ہے کہ پاکستان کو ایٹمی قوت،بھٹو کے خواب اور ڈاکٹر قدیر کی مہارت نے نہیں بنایا۔ ہم…

Read More

نمک کی کان میں زندگی کادلچسپ احساس

نمک کا پیٹ میں جانا معمول کی بات ہے مگرنمک کے پیٹ(نمک کی کان) میں زندہ انسانوں کو چلتے پھرتے دیکھ کر جو احساس پیدا ہوتا ہے اس کو الفاظ میں بیان نہیں کیا جاسکتا۔پاکستان میں چار موسم, معدنیات کے ذخائر, خوبصورت علاقوں سمیت بے شمار ایسی نشانیاں ہیں جن کو دیکھ کر بے ساختہ صورت ائرحمان کی آیت”فبأي الاء ربكما تكذبان” کا ورد منہ سے خودبخود جاری ہو جاتا ہے۔کیونکہ بحیثیت انسان ہماری فطرت ہے کہ ہم ناشکری کرتے ہوئے اللہ تبارک و تعالٰی کی نعمتوں کو جھٹلاتے رہتے…

Read More