پاناما کیس میں بڑی پیشرفت : دوسرا قطری خط آ گیا

اسلام آباد(نیوزلائن)پاناما کیس میں بڑی پیشرفت ، ایک کے بعد دوسرا قطری خط آ گیا ۔ حسین نواز نے قطری شہزادے کا خط اور جدہ سٹیل ملز کی فروخت کا ریکارڈ سپریم کورٹ میں جمع کر دیا ۔ شہزادہ جاسم نے کہا میاں محمد شریف نے 1980میں نقد بارہ ملین درہم کی سرمایہ کاری کی ۔ میاں شریف کی خواہش پر رقم کی سیٹلمنٹ کے لیے آف شور کمپنیوں کے بیئرر سرٹیفکیٹ حسین نواز کے نمائندے کو دئیے گئے ۔ پاناما کیس میں اہم موڑ ، حسین نواز کی جانب سے ایک اور قطری خط اور جدہ سٹیل ملز کی فروخت کا ریکارڈ سپریم کورٹ میں جمع ، میاں محمد شریف نے 1980میں نقد بارہ ملین درہم کی سرمایہ کاری کی ، 2005 میں 80 لاکھ ڈالر کی رقم شریف خاندان کو واجب الادا تھی ۔ میاں شریف کی خواہش پر رقم کی سیٹلمنٹ کے لیے آف شور کمپنیوں کے بیئرر سرٹیفکیٹ حسین نواز کے نمائندے کو دئیے گئے ، 2006 سے پہلے یہ سرٹیفکیٹ قطر میں تھے ، شہزادہ حمد بن جاسم کا خط میں موقف ، شہزادہ جاسم نے کہا کہ انہیں بتایا گیا کہ ان کے پہلے خط پر متعدد سوال اٹھائے گئے ۔ ان سوالوں کے جواب میں اپنا موقف پیش کر رہا ہوں ، دوسری جانب جدہ سٹیل کی فروخت کے ریکارڈ کے مطابق مل 2005 میں 6 کروڑ 31 لاکھ ریال میں فروخت ہو ئی ۔ حسین نواز نے شیزی نقوی کا بیان حلفی بھی سپریم کورٹ میں جمع کرایا ۔ بیان حلفی کے مطابق برطانوی عدالت میں التوفیق کمپنی کے نمائندے کی حیثیت سے پیش ہوتا تھا ۔ لندن کے چاروں فلیٹس حدیبیہ پیپرز ملز کے لیے رہن نہیں رکھے گئے ، لندن فلیٹس ضبط کرنے کی استدعا رحمان ملک کی رپورٹ کی روشنی میں کی –

Related posts