اوپن یونیورسٹی نے” موبائیل فرینڈلی ویب سائٹ” متعارف کرادی

اسلام آباد (نیوزلائن)علامہ اقبال اوپن یونیورسٹی نے” موبائیل فرینڈلی ویب سائٹ متعارف کرادی ہے جس میں طلبہ کی الگ الگ” تصویر لگی پروفائلز” بنائی جائیں گی۔ اس پروفائل کا فائدہ یہ ہوگا کہ ہر طالب علم اپنے داخلے سے لے کر امتحانات کے مراحل اور اسناد کے حصول تک تمام معلومات اور تعلیمی ریکارڈ کی مکمل تفصیل ایک ہی جگہ یعنی اپنی پروفائل پر دیکھ سکے گا۔ طالب علم کو اپنے تعلیمی مراحل کے بارے میں کسی بھی طرح کی معلومات حاصل کرنے کے لئے کسی اور جگہ رابطہ نہیں کرنا پڑھے گا ٗ انہیں تمام معلومات اور سوالات کے جواب اپنی پروفائل سے مل جائیں گی۔ تمام طلبہ کو پروفائل پر جانے کے لئے الگ الگ آئی ڈی الاٹ کئے جائیں گے۔ پروفائل میں جاری سمسٹر میں داخلے کی کنفرمیشن ٗ ایڈمیشن ہسٹری ٗ ٹیوٹرز کی معلومات ٗ کتابوں کی ترسیل کے بارے میں معلومات ٗ ورکشاپ شیڈول ٗ اسائنمنٹس ٗ تعلیمی پروگرامز کے ویڈیوز ٗ امتحانات کا شیڈول اور رول نمبر سلپ ٗ نتائج اور رزلٹ کارڈ ٗ سند اور ڈگری کی معلومات کے علاوہ اگلے سمسٹر کا داخلہ فارم بھی دستیاب ہو گا۔ موبائیل فرینڈلی ویب سائٹ میں داخلوں ٗ امتحانات ٗ ورکشاپس اور نتائج کے اعلانات جیسی تازہ خبروں/اعلانات سے طلبہ کو فوری طور پر باخبر رکھنے کے لئے الرٹ کا باکس بھی بنایا گیا ہے ۔نئی ویب سائٹ کی لانچنگ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وائس چانسلر ٗ پروفیسر ڈاکٹر شاہد صدیقی نے کہا کہ فاصلاتی نظام تعلیم میں ویب سائٹ پر طلبہ کے پروفائل کی بڑی اہمیت ہوتی ہے ٗ اوپن یونیورسٹی کے ملک بھر میں 13 لاکھ سے زائد طلبہ و طالبات موجود ہیں ٗ انہیں ایک ہی جگہ پر تمام مطلوبہ معلومات دستیاب کرنا ہماری ایک ذمہ داری تھی جسے آج ہم نے بہ حسن و خوبی مکمل کرلیاہے۔ انہوں نے کہا کہ سٹوڈنٹ فرینڈلی ویب سائٹ ٗ سٹوڈنٹ سپورٹ نظام کی بہتری کے لئے جاری کوششوں اور اقدامات کا حصہ ہے۔ ڈاکٹر شاہد صدیقی نے کہا کہ میری تمام تر توجہ طلبہ کی خدمات اور سہولتوں میں اضافہ کرنے پر مرکوز ہے کیونکہ طلبہ ہی یونیورسٹی کا اصل اثاثہ ہیں۔ سٹوڈنٹ فرینڈلی ویب سائٹ میں لائیو میڈیا بکس کے تحت طلبہ کو یونیورسٹی کے ایف ایم ریڈیو ٗ لائیو ٹی وی اور ویڈیوز آن ڈیمانڈ تک رسائی بھی حاصل ہوجائے ۔نئی ویب سائٹ کی لانچنگ تقریب میں ایڈیشنل رجسٹرار ٗ ڈاکٹر ضیغم قدیر ٗ شعبہ داخلہ کے ڈائریکٹر ٗ سید ضیاء الحسنین ٗ کمپیوٹر سیکشن کی انچارج ٗ شبنم این شاہد اور دیگر سینئر حکام بھی موجود تھے۔

Related posts