پاکستانی سنسر بورڈ نے ‘رئیس’ کی ریلیز پر پابندی عائد کر دی


اسلام آباد(نیوزلائن) پاکستان سنسر بورڈ نے بالی ووڈ فلم رئیس کی ریلیز پر پابندی عائد کر دی ہے۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق سنسر بورڈ کی جانب سے موقف اختیار کیا گیا ہے کہ فلم رئیس میں فلم کے موضوع میں مسلمانوں کے کردار کو منفی طور پر پیش کیا گیا ہے جبکہ ہندو مذہب کو اس فلم میں مثبت انداز میں پیش کیا گیا، اس کے علاوہ فلم میں دیگر ملک دشمن مناظر بھی ہیں، اس لیے اس غیر موزوں فلم کو پاکستانی سینماؤں میں ریلیز کی اجازت نہیں دی جا سکتی۔ فلم رئیس کو سندھ اور پنجاب فلم سنسر بورڈ نے پاس کر دیا تھا اور فلم کی نمائش گزشتہ روز 5 فروری کو ہونا تھی تاہم جب یہ فلم مرکزی فلم سنسر بورڈ اسلام آباد میں پیش کی گئی تو بورڈ کے ممبران نے قابل اعتراض مناظر کے باعث اسے فل بورڈ کر دیا۔ یہ بھی معلوم ہوا ہے کہ وفاق کی طرف سے سندھ اور پنجاب فلم سنسر بورڈز کو بھی ہدایت جاری کر دی گئی ہے کہ فلم کا سنسر سرٹیفکیٹ منسوخ کر دیا جائے۔ ادھر 25 جنوری کو ریلیز کی گئی فلم رئیس دنیا بھر میں اچھا بزنس کر رہی ہے۔ فلم رئیس میں شاہ رخ خان نے رئیس عالم نامی گجراتی گینگسٹر کا کردار ادا کیا ہے جو شراب فروشی کے کاروبار میں ملوث ہے۔ ماہرہ خان نے اس فلم میں شاہ رخ کی اہلیہ آسیہ کا کردار ادا کیا، جبکہ نواز الدین صدیقی نے پولیس اہلکار مجمودار کا کردار کیا ہے۔

Related posts