پنجاب حکومت کی نااہلی‘3ہزار ٹن درسی کتب ردی بن گئی

فیصل آباد(احمد یٰسین)پنجاب حکومت کی نااہلی کے باعث سکولوں میں طلبہ کے داخلوں کا ٹارگٹ پورا نہ ہو سکا جبکہ بہت بڑی تعداد میں سکولوں میں داخل طلباء و طالبات کو بھی محکمہ کے کرپٹ اہلکاروں نے درسی کتب فراہم نہیں کیں۔درسی کتب محکمہ تعلیم کے دفاتر اور سکولوں کے گوداموں میں پڑی ردی بن گئیں۔ اپنی غفلت اورلاپرواہی کا انعام حاصل کرنے کیلئے محکمہ تعلیم نے گوداموں میں پڑی درسی کتب ”ردی“ نیلام کرنا شروع کر دی۔راولپنڈی سمیت کئی شہروں میں پرانی کتب کی ردی نیلام کر دی گئی جبکہ کئی شہروں میں نیلامی کیلئے اقدامات اٹھائے جارہے ہیں۔ نیوزلائن کے مطابق پنجاب کے مختلف شہروں محکمہ تعلیم کے کے زیر کنٹرول پڑی درسی کتب تین ہزار ٹن سے بھی زائد وزن کی بتائی جا رہی ہیں۔راولپنڈی میں چند ہفتے قبل تین سو ٹن درسی کتب کی نیلامی کی گئی۔ اسی طرح فیصل آباد‘ لاہور‘ ملتان‘ سرگودھا اور صوبے کے تمام شہروں میں درسی کتب محکمہ تعلیم کے دفاتر اور سکولوں میں پڑی ہیں۔ ان میں سے بڑی تعداد میں ایسی کتب ہیں جو حکومتی اہلکاروں کی غفلت کی وجہ سے طلبہ کو تقسیم نہیں کی جا سکیں۔ ان کی جگہ نئے سال کیلئے مزید کتب آچکی ہیں اور پرانی ردی میں پھینک دی گئی ہیں۔ تین ہزار ٹن درسی کتب ردی کی شکل میں مارکیٹ میں آرہی ہیں اور بڑی مقدار میں آبھی چکی ہیں۔ جس کے بعد توقع کی جا رہی ہے صوبے میں ناخواندگی پر قابو پایا جاسکے یا نہیں مگر ردی کی کمی پر بڑی حد تک قابو پانا ممکن ہو جائے گا۔

Related posts