سیاسی مصلحتیں : ن لیگی حکومت ٹیکس چور صنعتکاروں کے سامنے سرنڈر کرگئی

فیصل آباد(احمد یٰسین)ایف بی آر ٹیکس چور صنعتکار مافیا کے سامنے سرنڈر کر گیا۔ چیمبر آف کامرس اور دیگر صنعتکار تنظیموں کی بلیک میلنگ میں آکر ملک کے بڑے صنعتکار گروپ ”ستارہ“کی ٹیکس چوری ثابت کرنے کیلئے شروع کی گئی کارروائی روک دی گئی حالانکہ ایف بی آر کے پاس ستارہ ٹیکسٹایل کے سیلز ٹیکس چوری کرنے کے مستند ثبوت موجود تھے اور لمبی چوڑی فائل تیار تھی۔ نیوز لائن کے مطابق ریجنل ٹیکس آفس فیصل آباد نے ستارہ گروپ‘ میاں ادریس‘ چیمبر آف کامرس اور دیگر صنعتکار تنظیموں کی بلیک ملینگ میں آنے سے انکار کر دیا تھا اور ستارہ ٹیکسٹائل کے خلاف سیلز ٹیکس چوری پکڑنے کیلئے ایکشن جار ی ریکھا تھا مگر وزیر اعظم کے مشیر برائے تجارت ہارون اختر صنعتکاروں کی احتجاج‘ ریلیوں اور بلیک ڈے منانے جیسی دھمکیوں کا سامنا نہ کر سکے۔نیوز لائن کے مطابق اسلام آباد میں اس حوالے سے ہونیوالی میٹنگ میں چیف کمشنر فیصل آباد نے اعلیٰ حکام کو ستارہ گروپ کی سیلز ٹیکس چوری ستارہ کے گوشواروں میں ہیرا پھیری بارے مکمل بریفنگ دی اور ستارہ ٹیکسٹائل کے خلاف تمام ثبوت حکام کے سامنے رکھے۔ میٹنگ میں موجود تمام اعلیٰ افسران اور ارکان اسمبلی نے ٹیکس چوری کے حوالے سے ستارہ گروپ کے برعکس ریجنل ٹیکس آفس فیصل آباد کے موقف لو درست قرار دیا تاہم سیاسی مصلحتوں کی شکار ن لیگی حکومت کے مشیر تجارت ہارون اختر نے اس معاملے سے صرف نظر کرنے اور ستارہ گروپ کو ریلیف دینے کا کہا۔مشیر تجارت نے حکومتی مجبوریوں کے تناظر میں چیئرمین ایف بی آر کو ستارہ گروپ کے خلاف کارروائی روکنے کا کہا جس پر چیئرمین ایف بی آر نے ریجنل ٹیکس آفس فیصل آباد کو ستارہ کے خلاف کارروائی وقتی طور پر روکنے کی ہدائت کر دی۔

Related posts