جعلی ادویات پر ایکشن: لوگوں کی زندگیوں سے کھیلنے والے بلیک میلنگ پر اتر آئے


فیصل آباد(ندیم جاوید سے)جعلی ادویات بنا کر اورخطرناک بیماریوں کی تدارک والی دوائیوں کی مصنوعی قلت پیدا کرکے لوگوں کی زندگیوں سے کھیلنے والا ڈرگ مینوفیکچررز مافیا عوامی فلاح کی قانون سازی ہوتے ہی حکومت کو بلیک میل کرنے پر اتر آیا۔احتجاج‘ ہڑتال ادویات کی قلت پیدا کرکے مریضوں کی زندگیاں خطرے میں ڈالنے کی کال دیدی۔نیوزلائن کے مطابق پنجاب حکومت نے ادویات کی مینوفیکچرنگ اور فروخت کے معاملات کو درست کرنے کیلئے ڈرگ ایکٹ کی منظوری کیا دی ڈرگ مینوفیکچررز مافیا براہ راست پنجاب حکومت کو بلیک میل کرنے پر اتر آیا۔پنجاب حکومت نے ڈرگ ایکٹ کو عوامی مفاد کے مطابق بنانے کی غلطی کیا کر لی ڈرگ مینوفیکچررز ہر چیز بھلا کر میدان میں کود پڑے اور حکومت کو آڑے ہاتھوں لے رہے ہیں۔اپنے مفادات پر زد پڑتی دیکھ کرڈرگ مینو فیکچررز اور ڈسٹری بیوٹرتمام تر اختلافات بھلااکٹھے ہو گئے اور چند گھنٹوں میں پاکستان فارما سوٹیکل مینو فیکچررزایسوسی ایشن کی جوائنٹ ایکشن کمیٹی کے نام سے نئی تنظیم بھی بنا لی اور حکومت کے خلاف احتجاج اور ہڑتال کی کال بھی دیدی۔پاکستان فارما سوٹیکل مینو فیکچررزایسوسی ایشن کی جوائنٹ ایکشن کمیٹی کے چیئرمین طاہر اعظم نے لاہور میں ایک پریس کانفرنس کی اور حکومت کو آڑے ہاتھوں لیا اور لوگوں کی زندگیاں خطرے میں ڈال کر ہڑتال کرنے کا اعلان کر دیا۔ڈرگ ایکٹ میں عوام کیلئے کیا نقصان ہے اس سوال کا جواب انہیں سوجھنے میں نہ آیا اور صرف ڈرگ مینوفیکچررز کے گھناؤنے مفادات کے تحفظ کی مانگ کرتے رہے۔سماجی حلقوں نے پنجاب حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ ادویات سازی اور ادویات کی فروخت کے معاملات کو عوامی مفاد کے مطابق بنانے کا سلسلہ بند نہ کیا جائے۔ ادویات سازی کیلئے سخت قانون سازی رکھی جائے اورادویات کی مصنوعی قلت پیدا کرکے عوام کی زندگیوں سے کھیلنے والوں کیساتھ سختی کیساتھ نمٹا جائے۔

Related posts