سماء ٹی وی کی گاڑی پر فائرنگ‘ کیمرہ مین شہید



کراچی(نیوزلائن)کراچی کے علاقے فائیو اسٹار چورنگی پر پولیس وین پر کریکر حملے کی کوریج کیلئے جانیوالی سماء ٹی وی کی ڈی ایس این جی وین پر فائرنگ کردی گئی، واقعے میں اسسٹنٹ کیمرہ مین تیمور شہید ہوگئے، سماء ٹی وی کے کارکن کو 2 گولیاں سینے میں لگیں جبکہ ہیڈ انجری بھی ہوئی تھی، تشویشناک حالت میں عباسی شہید اسپتال منتقل کیا گیا جہاں وہ زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے چل بسے۔ سماء ٹی وی کے مطابق فائیو اسٹار چورنگی پر پولیس وین پر کریکر حملہ کیا گیا جس کے بعد سماء ٹی وی کی ڈی ایس این جی واقعے کی کوریج کیلئے جارہی تھی کہ نامعلوم موٹر سائیکل سوار ملزمان نے فائرنگ کردی، گولی لگنے سے اسسٹنٹ کیمرہ مین تیمور زخمی ہوگیا جسے تشویشناک حالت میں اسپتال منتقل کیا گیا تاہم اسپتال میں زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے شہید ہوگیا۔ ملزمان فائرنگ کے بعد فرار ہوگئے، پولیس اور رینجرز کو واقعے کی اطلاع کردی گئی ہے، گرین لائن منصوبے کی وجہ سے ٹریفک جام کے باعث اسپتال پہنچنے میں مشکلات کا سامنا کرنا پڑا، اسسٹنٹ کیمرہ مین تیمور کا خون کافی بہہ گیا، اسپتال میں ان کی جان بچانے کی کوشش کی گئی تاہم وہ جانبر نہ ہوسکا، ڈاکٹرز نے تیمور کی شہادت کی تصدیق کردی۔ سماء ٹی وی کے مطابق موٹر سائیکل سواروں نے 6 سے 7 کئی فائر کئے، گولیاں سماء ٹی وی کی ڈی ایس این جی وین پر بھی لگی ہیں تاہم ڈرائیور اور دیگر ٹیکنیکل اسٹاف محفوظ ہے۔ آئی جی سندھ نے سماء ٹی وی کی ٹیم پر دہشت گردوں کی فائرنگ کے واقعے کا نوٹس لیتے ہوئے ایس ایس پی سینٹرل سے فوری طور پر رپورٹ طلب کرلی۔ سماء ٹی وی کا شہید ہونے والے اسسٹنٹ کیمرہ مین کراچی کا رہائشی تھا۔ اس کی عمر صرف بائیس برس تھی۔ سماء ٹی وی کےمطابق تیمور نے حال ہی میں سماء ٹی وی کو جوائن کیاتھا۔ تیمور نے کئی اہم ایونٹس میں سماء ٹی وی کی نمائندگی کی۔نوجوان تیمور نے ہمیشہ ہر موقع پر بڑھ چڑھ کرکام کیا۔ سماء ٹی وی کے اسسٹنٹ تیمور کی شہادت پر سیاسی جماعتوں کی جانب سے سخت احتجاج کیاگیاہے۔ سماء ٹیم کی کارکن کی شہادت پر سیاسی جماعتوں کاردعمل بھی سامنے آگیاہے۔ پیپلزپارٹی کے رہنما مولا بخش چانڈیو نے بتایاکہ اس واقعےمیں ملوث ملزمان کوگرفتارکیاجائے۔مولابخش چانڈیو نے کہاکہ اس واقعے میں ملوث دہشت گردوں کوسزادی جائےگی۔ مولابخش چانڈیو نے مزید کہاکہ ملزمان کی گرفتاری کیلئےکرداراداکروں گا۔ جماعت اسلامی کے امیر سراج الحق نے سندھ حکومت سے فوری طورپر قاتلوں کوگرفتارکرنے کی ہدایت بھی کی ہے۔ انھوں نے کہاکہ حکومت واقعےکافوری ایکشن لے۔ یہ واقعہ حکومت کےلیےٹیسٹ کیس ہے۔ انھوں نے کہاکہ حکومت اگرموجودہےتوایکشن لے۔

Related posts