ڈرگ ایکٹ: پنجاب حکومت کا ہڑتالی فارما سوٹیکلز کیساتھ سختی سے نمٹنے کا فیصلہ


لاہور(نیوزلائن)پنجاب حکومت نے ہڑتال کے نام پر بلیک میل کرنیوالے فارما سوٹیکلز کیساتھ سختی کیساتھ نمٹنے اور ڈرگ ایکٹ ہر صورت نافذ کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ ہڑتال کے نام پر مارکیٹ میں ادویات کی مصنوعی قلت پیدا کرنے کے ذمہ داران کے خلاف مقدمات کے اندراج اور فارماسوٹیکلز کے مظاہروں میں طاقت کے استعمال پر غور کیا جا رہا ہے۔ نیوز لائن کے مطابق پنجاب حکومت نے حتمی فیصلہ کر لیا ہے کہ ڈرگ ایکٹ کے حوالے سے فارماسوٹیکلز کیساتھ کوئی سمجھوتہ نہیں کیا جائے گا اور نئے ڈرگ ایکٹ کو بغیر کسی مزید ترمیم اور کوئی مطالبہ مانے بغیر نافذ کیا جائے گا۔پنجاب حکومت اس نقطے پر حتمی سٹینڈ لئے ہوئے ہے کہ ادویات سازی میں کوئی کوتاہی برداشت نہیں کی جائے گی۔ ادویات سازی کے حوالے سے قوانین پر عمل درآمد کروایا جائے گا۔ ادویات سازی میں معمولی سی کوتاہی بھی برداشت نہیں ہو گی۔ جعلی ادویات کی تیاری اور فروخت میں ملوث عناصر کیساتھ سختی کیساتھ نمٹا جائے گا۔ ادویات کی فروخت میں بھی سٹینڈرڈز کو مد نظر رکھنا ہوگا۔نئے ڈرگ ایکٹ کے نفاذ میں کوئی کوتاہی برداشت نہیں کی جائے گی اس سلسلے میں اگر کوئی رکاوٹ پیدا کرے گا تو اس سے سختی کیساتھ نمٹا جائے گا۔ایک روز قبل تک ادویات کے مینوفیکچررز اور ڈسٹری بیوٹرز کیساتھ مذاکرات پر آمادہ حکومت نے اب اس معاملے میں بات چیت نہ کرنے کا فیصلہ کیا ہے جبکہ ہڑتال کے نام پر مارکیٹ میں ادویات کی مصنوعی قلت پیدا کرنے کا موجب بننے والوں کیساتھ سختی کیساتھ نمٹنے اور ان کے خلاف نقص امن اور دیگر دفعات کے تحت مقدمات درج کرنے کی تیاریاں بھی کی جارہی ہیں۔سانحہ لاہور کے تناظر میں صوبہ بھر کے ڈپٹی کمشنرز اور ڈی پی اوز کے ہدایات کی گئی ہیں کہ میڈیکل سٹور مالکان‘ ادویات کے مینو فیکچررز اور ڈسٹری بیوٹرز کو مظاہرہ کرنے یا ریلی نکالنے کی اجازت نہ دی جائے۔ اس سلسلے میں تعاون نہ کرنے والوں کے خلاف سخت ایکشن لیا جائے۔

Related posts