پنجاب پولیس نے پختونوں کیخلاف آپریشن کو کمائی کا ذریعہ بنا لیا

فیصل آباد(نیوزلائن)پنجاب پولیس نے شہباز شریف حکومت کے پختونوں کیخلاف صوبہ بھر میں نسلی امتیاز پر مبنی آپریشن کو بھی کمائی کا ذریعہ بنا لیا۔ دہشت گردی کی روک تھام کے نام پر پختونوں کیخلاف آپریشن کے دوران معصوم لوگوں کو پکڑ کر ”نوٹوں“ کی سفارش کیساتھ رہائی دی جا رہی ہے۔نیوز لائن کے مطابق صوبہ بھر میں پختونوں کے علاقے پولیس کی عام کارروائیوں کا نشانہ بن رہے ہیں۔ دہشت گردی کی روک تھام کے نام پر عام پختونوں کو لا کر تھانوں میں بند کیا جا رہا ہے۔ پولیس ٹارگٹڈ کارروائی کی بجائے محض پختون ہونے کی بناء پر لوگوں کو حراست میں لے کر حوالاتوں کو بھر رہی ہے۔کارروائی کے دوران موقع پر پوچھ گچھ اور شناخت چیک کرنے کی بجائے پولیس پختونوں کو حراست میں لے کر تھانہ یاترا کرواتی ہے اور کئی کئی گھنٹے بلاوجہ حراست میں رکھنے کے بعد زیر حراست افراد کے لواحقین کے آنے پر ”نوٹ“ کی سفارش سے رہائی دیدی جاتی ہے۔ نیوز لائن کے مطابق پولیس کے اس روئیے کی شکایات پنجاب بھر سے آرہی ہے اور اعلیٰ افسران نے متعدد شہروں میں تھانیداروں کے اس متعصبانہ اور کرپٹ روئیے کیخلاف انکوائریاں بھی شروع کروائی ہیں۔

Related posts