پاکستانی صحافیوں کی قیادت حاصل کرنے کیلئے بڑے پیمانے پر جوڑ توڑ

 

اسلام آباد(نیوزلائن)پاکستانی صحافیوں کی ملک گیر تنظیم پاکستان فیڈرل یونین آف جرنلسٹس کی قیادت کے چناؤ کیلئے آخری مرحلہ پولنگ کل ہو گی۔ پولنگ میں پی ایف یو جے سے الحاق شدہ تمام یونینز کے ڈیلیگیٹ اپنا حق رائے دی استعمال کریں گی۔پی ایف یو جے کی قیادت حاصل کرنے کیلئے بڑے پیمانے پر سرگرمیاں اور جوڑ توڑ جاری ہے۔ صدر سیکرٹری کے الیکشن کیلئے متعدد سینئر رہنما اور صحافی لیڈر کوششیں کر رہے ہیں۔ نیوزلائن کے مطابق پی ایف یو جے کے الیکشن کیلئے پولنگ کل 19مارچ کو کوئٹہ میں ہونے جا رہے ہیں۔الیکشن میں کامیابی کیلئے دو سے تین پینل بنانے کی کوششیں ہو رہی ہیں۔ ایک سے زیادہ پینل میدان میں آنے سے گھمسان کا رن پڑنے اور سخت مقابلہ ہونے کا امکان ہے۔آج 18مارچ شام 5بجے کاغذات نامزدگی واپس ہونے کے بعد صورتحال واضح ہو گی۔اسلام آباد سے تعلق رکھنے والے سابق صدر پی ایف یو جے افضل بٹ پی ایف یو جے کے حالیہ الیکشن میں دوسری بار امیدوار ہیں اور وہ مضبوط امیدوار گردانے جا رہے ہیں تاہم ان کی کامیابی کلیئر نہیں ہے ان کے مقابل کراچی یا لاہور سے متفقہ امیدوار آنے کا امکان ہے جو کہ برابر کی چوٹ ہو سکتا ہے۔ افضل بٹ کے مقابلے میں سابق صدر لاہور پریس کلب ارشد انصاری صدر کا الیکشن لڑنے کی کوشش کر رہے ہیں۔ کراچی کیساتھ اتحاد کی صورت میں وہ مضبوط امیدوار ہو سکتے ہیں۔ارشد انصاری نے تو بھرپور انداز میں کمپئین بھی شروع کر رکھی ہے۔ کراچی سے جاوید چوہدری‘ ایوب جان سرہندی اور فاضل جمیلی نے بھی صدر اور سیکرٹری کیلئے کاغذات جمع کروا رکھے ہیں کسی ایک امیدوار پر اتفاق کی صورت میں کراچی کا امیدوار بھی مضبوط پوزیشن میں ہو سکتا ہے۔فیصل آباد سے تعلق رکھنے والے شمس الاسلام ناز بھی سیکرٹری جنرل کیلئے امیدوار ہیں اور اپنے وسیع تجربے‘ رابطوں اور ماضی کی کارکردگی کی وجہ سے و ہ سیکرٹری جنرل کیلئے انتہائی مضبوط امیدوار گردانے جا رہے ہیں۔سکھر کے لالہ اسد پٹھان بھی سیکرٹری کیلئے کوشش کر رہے ہیں جبکہ کراچی سے بھی متعدد امیدوار سیکرٹری کا الیکشن لڑنے کیلئے میدان میں ہیں

Related posts