نواز شریف حکومت نے پاکستان کو معاشی دیوالیہ کردیا‘ چین نے بچایا

اسلام آباد (نیوزلائن)نواز شریف کی حکومت پاکستان کو معاشی استحکام دینے میں بری طرح ناکام رہی ہے۔ زرمبادلہ کے ذخائر انتہائی نچلی حدوں کو چھونے لگے تھے۔ قریب تھا کہ پاکستان عالمی سطح پر معاشی دیوالیہ قرار دیدیا جاتا مگر چین نے پاکستان کی معیشت کو سہارا دینے کے لیے ایک ارب بیس کروڑ ڈالر فراہم کرکے معاشی دیوالیہ پن سے بچا لیا۔نیوزلائن کے مطابق گزشتہ چار سالوں سے پاکستانی معیشت مسلسل گراوٹ کا شکار ہے حکومت نے ورلڈ بینک اور آئی ایم ایف سے بھاری قرض بھی لئے مگر اس کے باوجود ملک کو معاشی استحکام نہ دے سکی۔ ملکی درآمدات میں مسلسل اضافہ ہورہا ہے جبکہ برآمدات میں انتہائی تیزی کیساتھ کمی آئی ہے ایسے میں حکومت کیلئے زرمبادلہ کی کم ترین شرح بھی برقراررکھنا بھی ممکن نہیں رہا تھا کہ اچانک چین میدان میں کود پڑا۔ چین نے سال 2016 میں 90کروڑ ڈالرکی خطیر رقم فراہم کرکے پاکستان کو زرمبادلہ کا بیلنس کسی حد تک برقرار رکھنے میں معاونت کی۔ جبکہ رواں سال کے ابتدائی تین ماہ میں 30 کروڑ ڈالر چین پاکستان کو دے چکا ہے۔نیوزلائن کے مطابق اسٹیٹ بینک کے اعدادوشمار ظاہرکرتے ہیں کہ ملکی خزانے میں فروری کے اختتام تک 17 ارب ڈالر موجود تھے جو گذشتہ سال اکتوبر کے 18 اعشاریہ 9ارب ڈالرسے کم تھے۔ یہی وہ وجہ تھی کہ پاکستان کو ہنگامی بنیادوں پر غیر ملکی قرضوں کی ادائیگی کے لیے نئے قرضے لینا پڑے۔اتنے بڑے پیمانے پر قرضے پاکستان میں غیرملکی کرنسی اکاونٹس میں خطرناک حد تک کمی کو ظاہر کرتے ہیں اوراس کی وجہ بڑھتی ہوئی درآمدات اور برآمدات اور ترسیلات زرمیں کمی ہے۔

Related posts