اختیارات نہیں دینےتوپیمراکوبندکردیں، ابصار عالم


اسلام آباد(نیوزلائن)چئیرمین پیمرا ابصار عالم نےکہاہےکہ پیمرا آئین کے تحت ذمہ داریاں نبھارہا ہے،شوکاز نوٹس پر بھی حکم امتناع جاری ہورہے ہیں،چیف جسٹس سے اپیل ہے کہ ہمارے زیر التوا کیسز سنے جائیں۔ اگر اختیار نہیں دینا تو پیمرا کو بند کردیں۔ اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتےہوئےابصارعالم نےکہا کہ پیمرا کے اختیارات کو محدود کردیا گیا ہے۔پیمرا کا اختیار عملی طور پر ہائیکورٹس کے پاس چلاگیا۔وزیر اعظم نواز شریف اور چیف جسٹس کو خط لکھا ہے۔چیئرمین پیمرانےمزیدبتایاکہ ہم نےآرمی چیف کو بھی خط لکھا ہے۔ چیئرمین پیمراکاکہناتھاکہ مزیدچینلزکی لائسنسنگ اوپن کرناچاہ رہے ہیں۔ انھوں نے کہاکہ قدامت پسند مائنڈ سیٹ ہم پر تنقید کرتا ہے۔پیمرا پوسٹ آفس کے طور پر کام کرتا ہے۔ ابصارعالم نےبتایاکہ میری باتوں کو ناموس رسالت سے غلط انداز میں جوڑا گیا۔ انھوں نے انکشاف کیاکہ میرے دو بھائی تحریک نظام مصطفیٰ میں شہادت پاچکے ہیں۔جو یہ باتیں کر رہے ہیں، میں اُن سب کوجانتا ہوں۔ابصارعالم نےمزید انکشاف کیاکہ میں نے گزشتہ سال بیاسی لاکھ روپے ٹیکس ادا کیا۔ پیمراکےمعاملات پر چئیرمین ابصارعالم کا کہناتھاکہ ہمارے لیے کام کرنا مشکل ہوچکا ہے۔ میڈیا پاکستان کا چوتھا ستون ہے، اس کا ریگولیٹر انتہائی اہم ہے۔ اگر اختیار نہیں دینا تو پیمرا کو بند کردیں۔ سماء

Related posts