سیون نیوزکے ورکر تنخواہوں کو ترس گئے‘اجتماعی خود کشیوں پر غور

لاہور(نیوزلائن)ویسے تو آج کل کھمبیوں کی طرح نئے سے نیا ٹی وی چینل کھل گیا ہے لیکن بظاہر اپنی ریٹنگ کا دعویٰ کرنے والے اکثر چینلز اپنے ملازمین کی تنخواہ بھی ادا کرنے سے قاصر ہیں- ایک ویب سائٹ کے مطابق چینل 7 نے تین ماہ سے اپنے ورکرز کو تنخواہ نہیں دی جبکہ مذکورہ چینل کے ڈائریکٹر نیوز بھی دو ماہ کی تنخواہ سے محروم ہیں-چینل 7 کی مارکیٹنگ ٹیم تنخواہیں نہ ملنے کی وجہ سے پہلے ہی چینل سے علیحدہ ہوچکی ہے، مارکیٹنگ ٹیم کا کہنا ہے کہ سوشل میڈیا پر جعلی ریٹنگ ظاہر کرکے انہیں مجبور کیا جارہا تھا کہ وہ کلائنٹس کو مطمئن کریں- یاد رہے کہ مذکورہ جبکہ چینل نے پانچ ماہ سے سیٹلایٹ کی فیس بھی ادا نہیں کی-پیسے نہ ملنے کی وجہ سے چینل کے اینکر رائے ثاقب کھرل بھی مستعفی ہوچکے ہیں جبکہ ڈرائیورز، این ایل ای اور دیگر سٹاف بھی تین ماہ سے تنخواہوں سے محروم ہے- عید سر پر ہے اور چینل 7 کے ورکرز روز بروز پریشانی میں مبتلا ہوتے جارہے ہیں- کئی ورکرز نے تو رمضان گذارنے کے لیے بھی جاننے والوں سے ادھار پیسے پکڑے ہوئے ہیں-چینل 7 کی بیوروآفسز کا یہ حال ہے کہ پشاور کے بیوروچیف نے استعفیٰ دے دیا ہے جبکہ کراچی کے بیوروچیف ورکرز کے سامنے تنخواہوں کا جھوٹا وعدہ نہ کرنے کی وجہ سے آفس ہی نہیں آرہے- لاہور میں سیون نیوز کا ہیڈ آفس بھی خالی ہونا شروع ہو چکا ہے۔ اسلام آباد میں سیون نیوز کا پورا سٹاف جواب دے گیا تھا جس کے بعد مانگے تانگے سے کچھ سٹاف جمع کیا گیا۔ فیصل آباد میں سیون نیوز کا سیمی ہیڈ آفس ہے جہاں چینل کا مالک خود براجمان ہوتا ہے۔ فیصل آباد آفس کا بھی پورا سٹاف کچھ ماہ تنخواہوں کی عدم ادائیگی کی وجہ سے جواب دے گیا تھا اور پورا سٹاف اجتماعی استعفے دے گیا سیمی ہیڈ آفس میں بھی ہنگامی بنیادوں پر ادھر ادھر سے بھرتی کی گئی اور یہ سٹاف بھی تنخواہوں کی عدم ادائیگی کے ہاتھوں دوبارہ اجتماعی استعفوں پر غور کر رہا ہے۔چینل کے حالات انتہائی دگرگوں ہیں مگر کوئی تنظیم یا یونین ورکر کے حقوق کے تحفظ کیلئے میدان میں اترنے اور چینل مالکان کے خلاف احتجاج کرنے کیلئے تیار نہیں ہے اور ورکر ہے کہ اس کا رمضان تو تباہ ہوہی چکا ہے عید بھی اندھیروں میں گزرنے کا خدشہ ہے۔ صحافتی حلقوں کا کہنا ہے کہ ایسے ہی حالات رہے تو وہ وقت دور نہیں جب چینل فائیو کی طرح سیون نیوز کا مالک کے خلاف احتجاج کرتے ہوئے ورکرز خودکشیوں پر مجبور ہو جائیں گے۔سیون نیوز کے ورکرز نے چیئرمین پیمرا سے مطالبہ کیا ہے کہ جعلی ریٹنگ ظاہر کرنے پر چینل انتظامیہ اور مالک عمر نذر شاہ جبکہ تنخواہوں کی عدم ادائیگی اور چینل کے انتظامی افسران اور مالکان کے خلاف سخت کارروائی عمل میں لائی جائے۔

Related posts