فیصل آباد:انٹی کرپشن ڈیپارٹمنٹ صوبائی محکموں میں فروغ بدعنوانی کیلئے کوشاں

فیصل آباد(نیوزلائن)فیصل آباد میں انٹی کرپشن ڈیپارٹمنٹ‘ فروغ بدعنوانی کیلئے بھرپور کوششیں کررہا ہے۔ تمام عملہ اپنے ڈائریکٹر کا فروغ بدعنوانی مشن میں بھرپور ممدومعاون ثابت ہو رہا ہے۔ تمام صوبائی محکموں میں کرپٹ افسران کی بدعنوانی کی حوصلہ افزائی کی جاتی ہے اور انہیں مکمل تحفظ اور مقدمات سے بچانے کیلئے ہر طرح کی معاونت فراہم کی جاتی ہے۔نیوزلائن کے مطابق انٹی کرپشن ڈیپارٹمنٹ فیصل آباد مکمل طور پر فروغ بد عنوانی محکمہ بن چکا ہے۔ فیصل آباد کے چار ہزار کرپشن سکینڈلز کوریجنل ڈائریکٹر انٹی کرپشن ڈاکٹر ارشاد احمدنے اپنی ذاتی نگرانی میں انتہائی ذمہ داری کیساتھ سنبھال کر الماری کی زینت بنا رکھا ہے۔صوبائی محکموں میں ہونیوالی کرپشن کیخلاف درخواستیں لے کر آنیوالے ’’ٹٹ پونجیوں ‘‘ کو دیکھتے ہی بھگا دیا جاتا ہے حسب توفیق انہیں بدعنوان الزام علیہان کے سامنے ذلیل و رسوا بھی کیا جاتا ہے تاکہ دوبارہ کوئی کرپشن کی نشاندہی کرنے کی ہمت نہ کرے اور صوبائی محکموں کے ’’اعلیٰ‘‘ افسران اطمینان اور تسلی کیساتھ فروغ کرپشن کا مشن پورا کر سکیں اور اپنی تجوریاں بھرنے میں انہیں کوئی پریشانی اور رکاوٹ درپیش نہ ہو۔ریجنل ڈائریکٹر انٹی کرپشن کے فروغ بدعنوانی کے مشن میں ڈائریکٹوریٹ کا تمام عملہ حصہ بقدر جثہ کے مصداق اپنا کردار بھرپور طریقے سے ادا کر رہا ہے اور بدعنوانوں کو اپنی اپنی سطح پر تحفظ فراہم کرنے کیلئے کوشاں رہتے ہیں۔ فرغ کرپشن کے مشن میں تخصیص کردہ طبقاتی تقسیم کا بھرپور خیال رکھا جا رہا ہے اور گریڈ 9تک کے ملازمین کو اس مشین میں حصہ لینے کی اجازت نہیں دی جاتی۔فروغ کرپشن مشن صرف ’’اعلیٰ‘‘ صوبائی افسران‘ کروڑ پتی ٹھیکیداروں‘ سیٹھوں اور سرمایہ داروں تک محدود رکھا گیا ہے ۔اور گریڈ 10سے چھوٹے سرکاری ملازمین کو اپنی اوقات میں رکھنے کیلئے ان کے خلاف بھرپورایکشن عمل میں لایا جاتا ہے۔اس کی خلاف ورزی پر انٹی کرپشن ڈیپارٹمنٹ کے افسران و ملازمین کو دور دراز کے علاقوں میں پھینک دیا جاتا ہے۔

Related posts