چینی طلباءنے پاکستان میں ملازمتوں کیلئے ”اردو ‘ ‘زبان سیکھناشروع کردی

اسلام آباد(نیوزلائن)بلآخر و ہ گھڑی آگئی جس کے بارے حکمران دعوے کرتے تھے ، چینی طلبا ءنے اردو زبان سیکھنا شروع کر دی ۔ نیوزلائن کے مطابق پاک چین اقتصادی راہداری منصوبے کے تحت پیداہونیوالی نوکریوں سے مستفید ہونے کے لیے چینی طلباءنے پاکستا ن کی قومی زبان اردو سیکھنا شروع کردی۔ چین کی پیکنگ یونیورسٹی میں 1951ءسے اردولینگوئیج ڈیپارٹمنٹ قائم ہے ،پیکنگ یونیورسٹی کے بعد ژیان اور گوانژو یونیورسٹی میں بھی اردوڈیپارٹمنٹ کا قیام عمل میں لایا جا چکا ہے جہاں چینی طلباءروشن مستقبل کی خاطراردو سیکھ رہے ہیں۔ بیجنگ فارن سٹڈیز یونیورسٹی 2007ءسے طلباءکو اردوسکھارہی ہے اور اب اس کے دوبیچ اپنی ڈگری وصول کرچکے ہیں۔فارن سٹڈیز یونیورسٹی میں اردوڈیپارٹمنٹ کی سربراہ زہویوآن نے اپنے ایک انٹرویو میں بتایاکہ پڑھنے والے طلباءمیں سے کچھ کو بیرون ملک یونیورسٹی میں مزید اعلیٰ تعلیم کیلئے سکالر شپس ملی ہیں جبکہ کچھ نے مختلف کمپنیوں میں نوکری کرلی، اس وقت 20طلباءکا ایک بیچ یونیورسٹی میں زیرتعلیم ہے۔ زہویوآن نے بتایاکہ بیجنگ فارن سٹڈیز یونیورسٹی اپنے طلباءکوتعلیم کے تیسرے سال 6ماہ کیلئے پاکستان میں نیشنل یونیورسٹی آف ماڈرن لینگوئجز (نمل)اور گورنمنٹ کالج یونیورسٹی بھیجے گی تاکہ بولنے اور لکھنے کی صلاحیتوں میں اضافہ کرسکیں۔ اس مقصد کیلئے یونیورسٹی کو حکومت پاکستان اور بیجنگ میں پاکستانی سفارتخانے سے مالی معاونت بھی ملتی ہے ، یونیورسٹی طلباءمیں ادبی مقابلے بھی کراتی ہے اور طلباءمیں پاکستان اور پاکستانی لوگوں سے متعلق آگاہی فراہم کرنے کے لیے ثقافتی تقریبات کا انعقاد بھی کیا جاتاہے ، اس سے نہ صرف طلباءمیں اردوسیکھنے کی خواہش بڑھتی ہے بلکہ ان کی اردوبھی بہترہوتی ہے۔

Related posts