بول ٹی وی کا مالک رشوت دے کر مقدمہ سے رہا ہوا‘ ایڈیشنل سیشن جج معطل

اسلام آباد(نیوزلائن)بول ٹی وی کا مالک شعیب شیخ مبینہ طور پر ایڈیشنل سیشن جج اسلام آبادپرویز القادر کو 50لاکھ روپے رشوت دے کر اپنے خلاف مقدمہ سے بری ہوا۔ الزام سامنے آنے پر اسلام آباد ہائی کورٹ نے اس معاملے کی ڈیپارٹمنٹل انکوائری کروائی۔ انکوائری کمیٹی نے جج کو برخاست کرنے کی سفارش کردی ہے تاہم عدالت عالیہ نے جج کو معطل کردیا ہے اور اسے شوکاز نوٹس جاری کیا ہے۔ نیوزلائن کے مطابق بول ٹی وی کے مالک شعیب شیخ کے حوالے سے الزام سامنے آیا ہے کہ وہ ایڈیشنل سیشن جج کو 50لاکھ روپے مبینہ رشوت دے کر اپنے خلاف مقدمہ سے بری ہوا ہے۔اس کے خلاف درج مقدمہ کا میرٹ پر فیصلہ نہیں کیا گیا۔ اس الزام کے سامنے آنے پر عدالت عالیہ اسلام آباد نے معاملے کی ڈیپارٹمنٹل انکوائری کروائی ۔ انکوائری کمیٹی نے جج پرویز القادر کو الزام سے بری نہ کیا اور اس کونوکری سے فارغ کرنے کی سفارش کر دی۔عدالت عالیہ نے جج کو اس حوالے سے شوکاز نوٹس جاری کردیا ہے اور ان سے اس الزام کے حوالے سے تفصیلی جواب طلب کیا ہے۔تاہم ایڈیشنل سیشن جج پرویز القادر کو کام سے روک دیا گیا ہے اور انہیں معطل کر دیا گیا ہے۔ایڈیشنل سیشن جج پرویز القادر نے شوکاز نوٹس کو اسلام آباد ہائی کورٹ میں چیلنج کیا ہے جس کی سماعت جمعہ کو ہو رہی ہے

Related posts