جےآئی ٹی ممبران کی جاسوسی کا آئی بی نے اعتراف کر لیا

اسلام آباد(نیوزلائن)جے آئی ٹی ممبران کی جاسوسی کی گئی آئی بی نے اعتراف کرلیا ڈی جی انٹیلی جنس بیوروکی طرف سے سپریم کورٹ میں جمع کرائے گئے جواب میں کہا گیا ہے کہ ایجنسی قومی اہمیت کے ہرمعاملے کی معلومات اکٹھی کرتی ہے۔ بلال رسول اور ان کی اہلیہ کو ہراساں نہیں کیا۔ نیوزلائن کےمطابق جے آئی ٹی ممبران کے کوائف اکٹھے کئے کیونکہ قومی اہمیت کے ہر معاملے کی معلومات اکٹھی کرنا معمول کا کام ہے۔ اعلیٰ سرکاری عہدوں پر تعینات افسران کا ڈیٹا بھی جمع کرتے ہیں یہ اعتراف کیا ہے ڈائریکٹر جنرل انٹیلی جنس بیور آفتاب سلطا ن نے سپریم کورٹ میں جمع کرائے گئے اپنے بیان میں ۔ کہتے ہیں پانامہ کیس بڑا اہم ہے اور ملکی سیاست پر اس کے گہرے اثرات ہیں۔ اس لیے جے آئی ٹی ممبران کے کوائف جمع کیے گئے۔ انہوں نے یہ معاملہ افشاءہونے پر اظہار تشویش کرتے ہوئے لکھا کہ اس حوالے سے موثر انداز میں تحقیقات کی جارہی ہیں۔ ڈی جی آئی بی نے اپنے جواب جے آئی ٹی کے رکن بلال رسول اور ان کی اہلیہ کو ہراساں کرنے اور ان کے سوشل میڈیا اکاﺅنٹ ہیک کرنے کے ا لزام کی تردید کردی۔ ان کے مطابق جے آئی ٹی کے کسی بھی رکن کی نجی زندگی میں مداخلت نہیں کیا۔

Related posts