پیپلز پارٹی کی ملک بھر میں گولڈن جوبلی یوم تاسیس تقریبات


اسلام آباد(نیوزلائن)پیپلز پارٹی پچاس سال کی ہوگئی، ملک بھر میں 50ویں یوم تاسیس کی تقریبات کا سلسلہ شروع ہوگیا۔ زرداری ہاؤس اسلام آباد میں پارٹی رہنماؤں سے ملاقات اور پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے بلاول بھٹو نے کہا تمام فورسز بس کردیں ، پلیزجمہوریت کو آگے بڑھنے دیں، جمہوریت کی مضبوطی کیلئے کام کرتے رہیں گے اوراس کیلئے سب کو بھٹو نظریہ اپنا نا ہوگا ۔ انکا کہنا تھا اسلام آباد دھرنے میں ریاست کو گھٹنے ٹیکتے دیکھاجس پر افسوس ہوا ، دھرنے کا معاملہ جوڈیشل کمیشن میں پیش ہونا چاہیے ، چاہتے ہیں حکومت اپنی مدت پوری کرے اور انتخابات اپنے وقت پر ہوں، ملک بھر میں حالیہ واقعات انتہائی افسوسناک تھے ،ان سے ایک پاکستانی نوجوان کی حیثیت سے مایوس ہوا ہوں، ختم نبوت شق میں ترمیم کی تحقیقات منظر عام پر لائی جائیں ۔انہوں نے کہاپیپلزپارٹی ایک مشن ہے اور یہ مشن جاری رہے گا، ذوالفقار بھٹو کے نظریے پرہم آج بھی عمل پیرا ہیں،پاکستان میں جمہوریت پی پی پی کی قیادت اور کارکنوں کی قربانیوں سے آئی۔ جمہوریت کا دعویٰ کرنے والی دیگر جماعتیں صرف اقتدار کیلئے لڑ رہی ہیں، جمہوریت میں ہمارا خون شامل ہے اسے ہم نے بچانا ہے ۔ دیگر جماعتوں کا کچھ بھی داؤ پر نہیں، جو لیڈر بڑے دعوے کر رہے ہیں انہیں تو جمہوریت کی ‘‘ج’’ تک کا نہیں پتہ۔ منتخب ہونے کے بعد پارلیمنٹ نہ آنے والے لیڈر کیسے جمہوری کہلا سکتے ہیں،وہ عوام کے حق حکمرانی ،جمہوریت کو بے توقیر کر رہے ہیں ، پارلیمنٹ کو بے توقیر کرنیوالے غیرجمہوری قوتوں کا ایجنڈا پورا کر رہے ہیں۔پی پی نے ایسے نام نہاد جمہوری لیڈروں کے استاد آمروں کا مقابلہ کیا،جیالے جمہوریت کا لبادہ اوڑھے آمریت کی باقیات کو سیاسی منظر سے مٹا دیں گے ۔ انکا کہنا تھا مردم شماری کے نتائج پر تحفظات ہیں لیکن ان پر کڑوا گھونٹ پینا ہوگا، ہمیں اپنی پچاس سال کی کمزوریوں کو بھی سامنے رکھنا ہوگا،5دسمبر کو پریڈ گراؤنڈمیں جلسہ ہوگا۔ قبل ازیں بلاول ہائوس کراچی میں آصف علی زرداری نے پارٹی پرچم لہرا کر پارٹی کی گولڈن جوبلی تقریبات کا آغاز اور پارٹی کی سالگرہ کا کیک کاٹا۔ اس موقع پر آصف علی زرداری نے کہا پاکستان اور پیپلز پارٹی کا ساتھ صدیوں تک رہے گا۔ بھٹوازم پاکستان کے مستقبل کی ضمانت ہے ۔یوم تاسیس پراپنے پیغام میں آصف زرداری نے کہا یہ خوشیاں منانے کا موقع ہے اور اس کیساتھ ہمیں اپنی غلطیوں کا تجزیہ اور پارٹی کی تنظیم نو کر نی چاہیے ۔ہمیں اپنے اندر جھانکنا ہوگا۔ ہم اس بات پر یقین رکھتے ہیں کہ سیاسی تبدیلی آزادانہ اور منصفانہ انتخابات کے ذریعے آنی چاہیے ۔ پیپلزپارٹی نے ہمیشہ جوڑ توڑ کے ذریعے سیاسی تبدیلی کی مخالفت کی اور کرتی رہے گی،اس موقع پر پیپلزپارٹی کی ایم این اے فریال تالپور، سابق وزیراعلی قائم علی شاہ، آفتاب شعبان میرانی، پیپلز پارٹی کراچی کے عہدیداران سعید غنی، جاوید ناگوری، وقار مہدی، راشد ربانی اور دیگر شریک تھے ،علاوہ ازیںپیپلز پارٹی ضلع شرقی کی جانب سے پیپلز سیکریٹریٹ میں تقریب کا انعقاد کیا گیا ،جس میں فریال تالپور نے پرچم کشائی کی اور کیک کاٹا،اس موقع پر فریال تالپور نے کہا کہ جمہوریت کو ڈیل ریل نہیں کرناچاہتے ، وفاقی حکومت نے ڈلیور نہیں کیا۔بلاول ہائوس کے قریبی گرائونڈ میں تقریب میں شرکت کے موقع پر سینیٹر شیری رحمن نے کہا کہ یہ ہمارے لئے بہت اہم اور تاریخ ساز دن ہے ،بھٹو کو سلام کرتی ہوں جس نے یہ پارٹی بنائی تھی۔ لاہو ر میں مرکزی تقریب نجی سینما گھر میں ہوئی ۔ جس سے خطاب کرتے ہوئے مقررین نے کہا پیپلز پارٹی کے روٹی ،کپڑا اور مکان کی اب بھی اتنی ہی ضرورت ہے جتنی آج سے پچاس سال پہلے تھی ،نیازی صاحب تبدیلی کی بات کرتے ہیں انہیں پتہ ہونا چاہیے کہ آج سے پچاس سال قبل پیپلز پارٹی کی بنیاد رکھ کر بھٹو شہید نے پاکستان میں حقیقی تبدیلی کی بنیاد رکھ دی تھی۔ تقریب سے میاں منظور وٹو، ا لطاف قریشی ، اسلم گل،عزیز الرحمن چن، اسرار بٹ،نوید چودھری،منور انجم ، شاہدہ جبین ، ثمینہ خالد گھرکی،عابد حسین صدیقی ، عارف خان اوردیگرنے خطاب کیا۔ تقریب میں سندھی لوک فنکاروں نے شاندار پرفارمنس کامظاہرہ کیا ۔ پشاور،ملتان،کوئٹہ اوردیگرشہروں میں بھی یوم تاسیس کی تقریبات کاانعقادکیاگیا ۔ دوسری طرف اسلام آبادانتظامیہ نے پیپلزپارٹی کو5دسمبرکے جلسے کیلئے این اوسی جاری کردیا ۔

Related posts

Leave a Comment