وفاقی اور پنجاب حکومت نے یوٹیلٹی سٹورز کو دیوالیہ کر دیا


اسلام آباد(نیوزلائن)مسلم لیگ ن کی وفاقی اور پنجاب حکومت کی وجہ سے یوٹیلٹی سٹورز کارپوریشن دیوالیہ ہونے کے قریب ہے۔دونوں حکومتوں نے کارپوریشن کی ادائیگیاں روک رکھی ہیں جس کی وجہ سے یوٹیلٹی سٹورز شدید مالی بحران کا شکار ہیں اور ملک بھر میں سٹورز بند ہونے کا خدشہ ہے۔ نیوزلائن کے مطابق وفاقی وصوبائی حکومت کی جانب سے 26 ارب 37 کروڑ74 لاکھ47 ہزار 164 روپے کی ادائیگیاں روکے جانے کی وجہ سے یوٹیلٹی سٹورز کارپوریشن نے نجی کمپنیوں کو نئے پرچیز آرڈرز جاری کرنا بند کردیئے اور درپیش مالی بحران کے باعث36 سو ورک چارج ملازمین فارغ کرنے کیلئے تیاری شروع کردی ہے حکومت پاکستان نے گذشتہ چارسالوں کے دوران چینی کی سبسڈی کی مد میں22 ارب29 کروڑ‘ رمضان ریلیف پیکج 58 کروڑ روپے‘وزیراعظم عوامی ریلیف پیکج 2 ارب 77 کروڑ روپے‘ ایمرجنسی ریلیف پیکج 27 کروڑ77 لاکھ روپے ‘ حکومت پنجاب کے تحت پبلک ریلیف پیکج 75 کروڑ53 لاکھ روپے‘ وزارت داخلہ کی جانب سے بے گھر ہونیوالے افراد کیلئے ایک کروڑ66 لاکھ 55 ہزار روپے‘ نیشنل ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹی 1 کروڑ11 لاکھ روپے‘ پاکستان بیت المال 1 ارب37 کروڑ روپے اور نیشنل ٹی بی پروگرام 3 کروڑ71 لاکھ روپے مالیت کا سامان اشیائے صرف مختلف اوقات کے درمیان یوٹیلٹی سٹورز پاکستان سے حاصل کیا گیا جس کی ادائیگیاں نہ ہونے سے ادارہ ہذا دیوالیہ پن کی طرف بڑھتا جارہا ہے پاکستان بھر کے یوٹیلٹی سٹورز پر ہرقسم کا آئل گھی موجود نہیں ہے۔اس صورتحال کی وجہ سے ملک بھر میں یوٹیلٹی سٹورز بند ہونے کا خدشہ ہے جبکہ ادائیگیاں نہ کی گئیں تو مالی بحران میں ہر گزرتے دن کیساتھ شدت آتی جائے گی۔

Related posts