پراپرٹی ٹیکس سے بچنے کیلئے10ہزار سیٹھوں کازیرتعمیرکاڈرامہ


ملتان(نیوزلائن)پراپرٹی ٹیکس سے بچنے کیلئے زیرتعمیرکاڈرامہ،10ہزارسے زائد کمرشل و رہائشی عمارتوں کاانکشاف ہواہے ۔تفصیل کے مطابق محکمہ ایکسائز نے 10ہزار سے زائد ایسی کمرشل ورہائشی عمارتوں کا کھوج لگا لیا ہے جن کے مالکان نے گزشتہ3سال سے تعمیر مکمل ہو نے کے باوجودپراپرٹی ٹیکس سے بچنے کیلئے محکمہ ایکسائز کے ریکارڈ میں زیر تعمیر لکھوا یا ہو اتھا۔ محکمہ ایکسائز نے پراپرٹی ٹیکس ادا نہ کرنیوالے ان کمرشل و رہائشی بلڈنگز مالکان کو آخری نوٹسزبھجوا د ئیے۔ ٹیکس ادا نہ کرنے کی صورت میں عمارتیں سیل کر کے ٹیکس وصول کیا جائیگا ۔ذرائع کے مطابق ڈائریکٹر ایکسائز سید عاشق حسین شاہ کو نشاندہی کی گئی کہ شہر میں متعدد ایسی کمرشل و رہائشی عمارتیں ہیں جنکے مالکان نے ریکارڈ میں زیر تعمیر لکھوایا ہو اہے۔ ڈائریکٹرایکسائز نے محکمانہ ریکارڈ میں زیر تعمیر لکھی گئی عمارتوں کا خفیہ سروے کرایا تو انکشاف ہوا کہ ضلع میں ایسی10ہزار سے زائد کمرشل و رہائشی عمارتیں موجود ہیں ۔ فائنل نوٹس بھجوانے پر سینکڑوں پراپرٹی مالکان نے ٹیکس ادا کر دیا جبکہ ہزاروں مالکان نے ٹیکس ادا کرنے کے بجائے سفارشیں کرانا شروع کر دی ہیں ۔جون سے قبل پراپرٹی ٹیکس ادا نہ کرنے کی صورت میں پراپرٹیاں سیل کر کے مالکان سے ٹیکس وصول کیا جائے گا۔ذرائع کا کہنا ہے کہ ان بلڈنگز مالکان کی زیادہ تعداد با اثر شخصیات کی ہے جن میں تاجر ،عوامی نمائندے اور سرکاری افسران شامل ہیں ۔

Related posts