کراچی کے تربیت یافتہ نوجوان ملک کی قیادت کرینگے ،گورنر


کراچی (نیوزلائن) گورنر سندھ محمد زبیر نے کہاکہ کراچی کے تربیت یافتہ نوجوان مستقبل کے پاکستان کی قیادت کریں گے ۔ ملک سے بنیاد پرستی اور دہشت گردی کی جڑ کو ختم کرنا ہے تو نوجوانوں خصوصاً طالب علموں کی تعلیم و تربیت پر توجہ دینا ہوگی اس حوالے سے محمد احمد شاہ کی قیادت میں آرٹس کونسل جو کام کررہا ہے وہ بہت بڑا کارنامہ ہے کہ ایک سال میں ساڑھے 17ہزار طالب علموں کو عملی تربیت کی سہولت مہیا کی گئی۔ ہماری خواتین معاشرے کی ترقی اور آئندہ نسل کی تربیت میں اہم رول ادا کررہی ہیں۔ تعلیمی اداروں کا 75فیصد انصرام و انتظام خواتین کے ہاتھ میں ہے ۔ آرٹس کونسل کراچی ملک بھر میں سب سے زیادہ ثقافتی ادبی و علمی سرگرمیوں کا مرکز بن چکا ہے جس سے شہرمیں سماجی سرگرمیوں کے فروغ میں مدد ملے گی۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے بدھ کو آرٹس کونسل آف پاکستان کراچی میں یوتھ ٹریننگ پائلٹ پروجیکٹ کے پہلے پروگرام سے مہمانِ خصوصی خطاب کرتے ہوئے کیا۔ کمشنر کراچی اعجاز احمد خان سیکریٹری آرٹس کونسل پروفیسر اعجاز احمد فاروقی، کراچی کی یونیورسٹیوں کے وائس چانسلرز اور کالجوں کے پرنسپلز بھی اس موقع پر موجود تھے جن کو گورنر سندھ نے اس پروگرام میں تعاون کرنے پر آرٹس کونسل کی جانب سے شیلڈ دی۔ آرٹس کونسل کے صدر محمد احمد شاہ نے خطبہ استقبالیہ پیش کیا اور مطالبہ کیاکہ فائن آرٹ کو تعلیم کا لازمی طور پر حصہ ہونا چاہئے ۔ آرٹس کونسل کراچی کی طرف سے نوجوانوں خصوصاً لاکھوں طالب علموں کو مفت تربیت فراہم کی گئی ہے اور شہر کے سرکاری تعلیمی اداروں جہاں متوسط اور غریب طبقہ کے بچے زیر تعلیم ہیں وہاں پر تربیت کا پروگرام شروع کیاگیا جو خاصا کامیاب ہوا۔ جس کی مثال آج آپ کے سامنے ان طلبہ و طالبات کی شکل میں ہے ۔ گورنر سندھ نے کہاکہ ریاست میں ہر کسی کو اپنی بات کہنے کی آزادی ہونی چاہیے ، برداشت، صبر اور گفتگو کا عمل جاری رہنا چاہیے ، میوزک، تھیٹر اور مصوری کا بھی معاشرے میں رول ہوتا ہے اس کی ترویج ہونی چاہیے ،پاکستانی معاشرے کو ایک مخصول راستے پر لگانے کے ہم سب ذمے دار ہیں اور اب ہم سب کو مل کر معاشرے کو درست سمت میں لانا ہوگا۔

Related posts