کمپنیوں میں کرپشن: جواب کے لئے حکومت کو آخری مہلت


لاہور(نیوزلائن)لاہور ہائیکورٹ نے صاف پانی کمپنی سمیت 56 کمپنیوں میں اربوں روپے سے زائد کی مبینہ کرپشن کے خلاف درخواست پرکمپنیوں کے وکلا ء کو جواب داخل کروانے کے لئے آخری مہلت دے دی ۔مسٹر جسٹس شاہد کریم نے شہری منیر احمد سمیت دیگر کی درخواستوں پر سماعت شروع کی تو صاف پانی کمپنی سمیت 56کمپنیوں کے وکلا نے جواب جمع کروانے کے لئے مزید مہلت دینے کی استدعا کی، جس پر عدالت نے ریمارکس دیئے کہ اگر آئندہ سماعت پر جواب داخل نہ کروائے گئے تو قانون کے مطابق کارروائی کی جائے گی ، درخوست گزاروں نے موقف اختیار کر رکھا ہے کہ پنجاب حکومت نے گزشتہ 8سالوں میں 56 کمپنیاں بنائیں جس میں ٹرانسپورٹ اور صاف پانی سمیت دیگر شامل ہیں جبکہ آئین کے آرٹیکل 140(اے )کے تحت جو کام کمپنیز کو سونپے گئے وہ بلدیاتی نمائندوں نے کرنے تھے، درخواست گزاروں نے مزید موقف اختیار کر رکھا ہے کہ من پسند افراد کو نوازنے کے لئے لاکھوں روپے کی تنخواہوں اور مراعات دیکر قواعد ضوابط کے خلاف بھرتیاں کی گئیں جبکہ ان کمپنیوں میں 80ارب روپے سے زائد کرپشن بھی ہوئی لیکن ان کمپنیز کا آڈٹ بھی نہیں کروایا گیا ،کمپنیوں میں کرپشن کے حوالے سے نیب کو از سر نو تحقیقات کا حکم دیا جائے اور صاف پانی کمپنی سمیت 56کمپنیوں کی تشکیل کالعدم کی جائے ۔

Related posts