پنجاب فوڈ اتھارٹی نے چینی نمک پر پابندی عائد کر دی


راولپنڈی(نیوزلائن) اجینو موتو،جسے چینی نمک بھی کہا جاتا ہے، ہمارے ہاں گزشتہ کچھ سالوں سے بہت مقبول ہو چکا ہے لیکن بدقسمتی سے شہریوں کی اکثریت اس بات سے بے خبر ہے کہ یہ صحت کے لئے بے حد نقصان دہ ہے۔ پنجاب فوڈ اتھارٹی سائنٹیفک پینل نے تحقیق کے بعد اس کے نقصانات ثابت ہونے پر اس پر پابندی عائد کر دی ہے۔ سائنٹیفک پینل کی تحقیق میں پتا چلا کہ اجینو موتو یا چائنہ سالٹ میں مونو سوڈیم گلومیٹ پایا جاتا ہے جوسر درد، دل کی بے ترتیب دھڑکن، دماغی و اعصابی مسائل، بلڈ پریشر، ہائپر ٹینشن جیسی بیماریوں کا سبب بنتا ہے۔ چائنہ سالٹ کا استعمال حاملہ خواتین کے لیے بھی سخت نقصان دہ قرار دیا گیا ہے۔ سائنٹیفک پینل کی تحقیق کے نتیجے میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ ہوٹلوں، ریستورانوں، منجمد خوراک اور دیگر مصنوعات میں چینی نمک یعنی اجینو موتو کے استعمال پر پابندی عائد کی جائے۔ پنجاب فوڈ اتھارٹی نے چینی نمک کے استعمال پر مکمل پابندی کے لیے 31مارچ کی حتمی تاریخ دی ہے۔ مزید یہ کہ مونو سوڈیم گلومیٹ کو اپنی مصنوعات میں استعمال کرنے والی کمپنیوں کے لیے ضروری قرار دیا گیا ہے کہ پنجاب پیور فوڈریگولیشن 2017کے مطابق لیبل پر جلی حروف میں لکھیں کہ “اس میں مونوسوڈیم گلومیٹ یعنی اجینو موتو کا استعمال کیا گیا ہے جو 12ماہ سے کم عمر کے بچوں اور حاملہ خواتین کے لیے موزوں نہیں ہے۔”

Related posts