ایچ ای سی نے قائداعظم یونیورسٹی کو پی ایچ ڈی داخلوں سے روک دیا


اسلام آباد(نیوزلائن)اوور کراؤڈ ہونے کی وجہ سے ایچ ای سی نے قائداعظم یونیورسٹی کو پی ایچ ڈی میں داخلوں سے روک دیا ہے۔ نیوزلائن کے مطابق ایچ ای سی نے قائد اعظم یونیورسٹی کو پی ایچ ڈی کے مزید داخلے کرنے سے روک دیا ہے۔ اس کی وجہ یہ بتائی جا رہی ہے کہ یونیورسٹی نے طویل عرصے سے پی ایچ ڈی کی ڈگری جاری نہیں کی۔ گزشتہ دس سالوں کے دوران یونیورسٹی میں پی ایچ ڈی کا داخلہ لینے والے اپنا ریسرچ ورک کرنے میں کامیاب نہیں ہو پائے ۔ جس کی وجہ سے یونیورسٹی میں پی ایچ ڈی کے جاری طلبہ کی تعداد بہت زیادہ ہو چکی ہے ۔ ٹیچرز کے پاس اوور کراؤڈہے اور ان کیلئے بھی اپنے طلبہ کو ریسرچ کروانا ممکن نہیں ہو پا رہا۔ یونیورسٹی اس سال بھی پی ایچ ڈی کے داخلے کرنا چاہتی تھی مگر ہائیرایجوکیشن کمیشن نے جاری طلبہ کے ریسرچ ورک مکمل کرنے تک مزید داخلوں سے روک دیا ہے۔ ذرائع کے مطابق قائد اعظم یونیورسٹی ایچ ای سی کی اس پابندی کو ختم کروانے کیلئے کوشاں ہے اس کیلئے یونیورسٹی اپنا اثرورسوخ بھی استعمال کررہی ہے جبکہ جاری طلبہ کو ’’فارغ‘‘ کرنے کا شارٹ کٹ بھی ڈھونڈا جا رہا ہے۔

Related posts