مجھے ہمیشہ سازش سے ملک کی خدمت سے روکا گیا، نوازشریف



فیصل آباد(نیوزلائن)سابق وزیراعظم نوازشریف کا کہنا ہے کہ آئندہ انتخابات میں ایک نئے پاکستان کا ریفرنڈم ہوگا۔ جڑانوالہ میں جلسے سے خطاب کرتے ہوئے سابق وزیراعظم نوازشریف کا کہنا تھا کہ میں جو وعدہ کرتا ہوں وہ پورا کرتا ہوں، لیکن مجھے ہمیشہ ایک سازش کے تحت ملک کی خدمت سے روکا گیا، 1999 میں بجلی کی کمی نہیں تھی، دہشت گردی کا نام و نشان نہیں تھا ملک ترقی کررہا تھااور پاکستان ایشین ٹائیگر اور ایٹمی طاقت بن کرابھر رہا تھا لیکن مشرف نے مارشل لا لگا کرستیا ناس کردیا۔ 7 سال جلاوطنی میں اور 14 ماہ جیل میں گزارے، 13 سال بعد دوبارہ آئے تو ملک اندھیروں میں ڈوبا ہوا تھا، ہم نے آ کر لوڈ شیڈنگ ختم کی۔ انہوں نے کہا کہ مشرف نے مارشل لاء لگا کر پاکستان کو تباہ کر دیا اور پاکستان کو ایٹمی قوت بنانے والے وزیر اعظم کو جلا وطن کر دیا، آج پاکستان پھر انتشار کا شکار ہو رہا ہے، میرے دور میں ڈرون حملے بند ہوئے تھے، آج ڈرون حملے پھر شروع ہو گئے ہیں۔ ہم نے پاکستان کو خود مختار ملک بنایا تھا، نیا پاکستان بنانے کی بات کرنیوالوں سے پوچھیں انہوں نے ملک کو کیا دیا؟ انہوں نے دھرنے، جھوٹ اور بہتان تراشی کےعلاوہ کچھ نہیں کیا، ہم نے دل و جان سے پاکستان کی خدمت کی، مجھےعوام نے وزیر اعظم بنایا تھا، مجھے کوئی نہیں نکال سکتا، میرا عوام سے محبت کا رشتہ کوئی نہیں توڑ سکتا، عوام کا فیصلہ ہمیشہ حتمی ہوتا ہے، آج کل تمام کیسز میرے خلاف لگے ہوئے ہیں، جب تک عوام میرے ساتھ ہیں، فیصلے میرا کچھ نہیں بگاڑ سکتے۔ نواز شریف بولے، وہ کہتے ہیں کہ نواز شریف کو پارٹی صدارت سے بھی ہٹا دو، میں پوچھتا ہوں پارلیمنٹ نے قانون بنایا ہے، وہ کس طرح اس قانون کو ختم کر سکتے ہیں؟ اگر مجھے پارٹی صدارت سے ہٹایا تو پھر قوم خود نوٹس لے گی، تحریک عدل میں فوری انصاف کو یقینی بنائیں گے، شہباز شریف نے پنجاب میں بے پناہ کام کئے۔ انہوں نے مزید کہا کہ جلسے میں شیروں کا جم غفیر ہے، یہ لاہور مال روڈ والا جلسہ نہیں ہے، لاہور میں خالی کرسیوں کا جم غفیر تھا، جڑانوالہ کے شیروں کے جلسے کا کوئی مقابلہ نہیں، فیصل آباد والے ہمیشہ فیصلہ دیتے ہیں، جڑانوالہ کے لوگ نااہلی کے فیصلے کو نہیں مانتے، بیٹے سے تنخواہ نہ لینا بھی کیا باپ کا جرم ہوتا ہے؟ نواز شریف نے کہا کہ پاکستان پھر انتشار کا شکار ہو رہا ہے، ڈرون حملے پھر شروع ہو گئے ہیں، اوباما سے کہا تھا کہ پاکستان خود مختار ملک ہے۔ انہوں نے عوام سے کہا کہ آپ میرے اور میں آپ کا ہوں، آپ نے مجھے وزیر اعظم بنایا تھا اور جڑانوالہ اب ضلع بھی بنے گا، یہ لوگ پاکستان کی کیا خدمت کریں گے؟ یہ تو اپنے آپ کو سنبھال نہیں سکتے، آپ کو کیسے سنبھالیں گے؟ شہباز شریف کی محنت کی وجہ سے آج پنجاب بدلا ہوا ہے، فیصل آباد، بہاولپور اور ساہیوال میں بھی میٹرو بس کی باری آئیگی، میٹرو کو نئے پاکستان والے جنگلہ بس کہتے تھے، اب انہیں بھی میٹرو بس بنانے کا خیال آ گیا ہے۔ نوازشریف کا کہنا تھا کہ 2013 کے انتخابات کے بعد جس ملک کی باگ ڈور ہمارے ہاتھوں میں تھمائی گئی وہ مکمل طور پر معاشی بدحالی کا شکار تھا، ملک بھر میں دہشت گردی اور قتل غارت گری جاری تھی، لوڈ شیڈنگ کا عذاب عوام پر مسلط کردیا گیا تھا، عوام بے روزگاری کے باعث خودکشیوں پر مجبور ہوگئے تھے لیکن ہم نے اقتدار سنبھالتے ہی ملک کی حالت یکسر تبدیل کردی، میرے دور میں ڈرون حملے بند ہوگئے تھے، میں نے خود امریکی صدر اوباما سے کہا تھا پاکستان آزاد ملک ہے کوئی ڈرون حملہ نہیں کرسکتا، لیکن جیسے ہی مجھے نااہل قرار دیا گیا ڈرون حملے پھر شروع ہوگئے ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ اب تو بجلی کی تار سے ڈرنے والے بھی ہم سے ٹکر لینے آرہے ہیں، میں ان سے کہتا ہوں کہ میں بڑے زور اور جوش میں ہوں میرے اورعوام کے درمیان مت آؤ، کیوں کہ عوام میری اور میں عوام کا ہوں، مجھے 5 سال کیا پوری زندگی کے لئے بھی نااہل کردیا جائے تو عوام سے رشتہ نہیں ٹوٹے گا۔ سابق وزیراعظم نے کہا کہ لاہور میں خالی کرسیوں کا جمِ غفیر تھا آج کا جلسہ دیکھ کرقوم فیصلہ کرے کہ اِس جلسے کے شرکا کا مقابلہ کہاں اورجو کون کرسکتا ہے، مجھے نااہل کرنے والے بھی دیکھ لیں کہ عوام اس فیصلے کو نہیں مانتے، کیا بیٹے سے تنخواہ نہ لینا باپ کا جرم ہوتا ہے، مجھے عوام نے اپنے ووٹ کے ذریعے اسمبلی میں بھیجا تھا لیکن چند لوگوں کو پاکستانی عوام کے ووٹ کی اہمیت کا خیال نہیں، آئندہ انتخابات میں ایک نئے پاکستان کا ریفرنڈم ہوگا اور مجھے دوبارہ اسمبلی میں جانے سے کوئی نہیں روک سکتا، عوام اپنے ووٹ سے سارے فیصلے مسترد کردے گی۔

Related posts